امریکی اور نیٹو فوج کے کمانڈر کی دوحہ میں طالبان قیادت سے ملاقات،کن اہم ترین اُمور پر گفتگو ہوئی؟تفصیلات آگئیں

امریکی اور نیٹو فوج کے کمانڈر کی دوحہ میں طالبان قیادت سے ملاقات،کن اہم ترین اُمور پر گفتگو ہوئی؟تفصیلات آگئیں


امریکی اور نیٹو فوج کے کمانڈر کی دوحہ میں طالبان قیادت سے ملاقات،کن اہم ترین …

دوحہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)افغانستان میں امریکی اور نیٹو افواج کے کمانڈر جنرل آسٹن ایس ملر نے دوحہ میں طالبان قیادت سے ملاقات کی ، ملاقات میں فریقین مابین تشدد میں کمی بارے تبادلہ خیال کیا گےا،افغانستان میں امریکی ائیر بیس پر حملے اور طالبان قیدیوں کی رہائی بارے بھی گفتگو کی گئی ،دوسری جانب افغان نیشنل آرمی نے فضائی حملہ کر کے 3طالبان کو ہلاک جبکہ 4کو زخمی کر دیا ہے، فضائی حملے میں ہلاک ہونے والوں میں ایک طالبان کمانڈر ملا ابرار بھی شامل ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق افغانستان میں امریکی اور نیٹو افواج کے کمانڈر جنرل آسٹن ایس ملر نےدوحہ میں طالبان کی قیادت سے ملاقات کی ۔ امریکی افواج کے ترجمان کرنل سونی لیگیٹ نے کہا کہ یہ اجلاس معاہدے کے فوجی چینل کا ایک حصہ تھا ۔ اجلاس میں فریقین نے تشدد کو کم کرنے کی ضرورت پر تبادلہ خیال کیا۔طالبان نے بھی اجلاس کی تصدیق کرتے ہوئے ترجمان سہیل شاہین نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ یہ ملاقات امریکی طالبان معاہدے پر عمل درآمد اور اب تک ہونے والی خلاف ورزیوں کے بارے میں ہے۔29 فروری کو دوحہ میں امریکی اور طالبان کے معاہدے پر دستخط کے تحت طالبان کو افغانستان میں امریکی فوجی مراکز پر حملہ نہیں کرنا چاہئے۔ 5 ہزار طالبان قیدیوں کی رہائی بھی اس معاہدے کا ایک حصہ ہے۔

دوسری جانب جنوبی افغانستان کے صوبے زابل میں فضائی حملے کے بعد 3 طالبان عسکریت پسند ہلاک اور چار زخمی ہوگئے ہیں۔ یہ بات ملک کی فوج کے ترجمان نے ہفتے کے روز میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتائی ۔تفصیلات کے مطابق یہ کارروائی عسکریت پسندوں پر ایک پیشگی تنبیہہ ہے ۔ طالبان صوبہ بھر میں فوجی چوکیوں پر حملہ کرنے کا ارادہ رکھتے تھے ۔ترجمان نے بتایا کہ فضائی حملے میں ہلاک ہونے والوں میں ایک طالبان کمانڈر ملا ابرار بھی شامل تھا۔طالبان نے ابھی تک اس واقعے پر کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے