امریکی صدر ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روک دی، سنگین ترین الزام لگادیا

امریکی صدر ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روک دی، سنگین ترین الزام لگادیا


امریکی صدر ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روک دی، سنگین ترین الزام لگادیا

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت پر کورونا وائرس کے معاملے میں چین کی طرفداری کرنے اور دنیا کو گمراہ کرنے کا سنگین الزام عائد کرتے ہوئے اس کی فنڈنگ روکنے کا اعلان کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق چند روز قبل ایک پریس کانفرنس میں صدر ٹرمپ عالمی ادارہ صحت پر خوب برسے اور کہا کہ عالمی ادارہ صحت کورونا وائرس کا پھیلاﺅ روکنے میں ناکام رہا ہے۔ اس معاملے میں وہ چین کی پشت پناہی کر رہا ہے اورکورونا وائرس کے متعلق دنیا کو بروقت اور درست معلومات نہیں دے سکا جس کی وجہ سے دنیا اس وباءکو روکنے میں ناکام رہی۔

اس پریس کانفرنس میں انہوں نے اعلان کیا تھا کہ وہ عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روکنے پر غور کریں گے اور گزشتہ روز انہوں نے اس پر فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ انہوں نے عالمی ادارہ صحت کی 50کروڑ ڈالر کی فنڈنگ معطل کر دی ہے۔چین اور دیگر ممالک کی طرف سے امریکی حکومت کے اس اقدام پر شدید تحفظات کا اظہار کیا گیا ہے۔ چینی حکام کا کہنا ہے کہ ”صدر ٹرمپ کے اس اقدام سے کورونا وائرس کے خلاف اجتماعی کاوشوں کو شدید نقصان پہنچے گا اور اس معاملے میں بین الاقوامی تعاون متاثر ہو گا۔“ چینی وزارت خارجہ کے ترجمان ژاﺅ لی جیان کا کہنا تھا کہ ”کورونا کی وباءکے خلاف عالمی جنگ اس وقت ایک انتہائی نوعیت کے مرحلے میں ہے۔ ایسے موقع پر عالمی ادارہ صحت کی فنڈنگ روکنے سے وباءکا پھیلاﺅ روکنے کی کوششوں کو شدید دھچکا لگے گا۔ “ واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت اور چینی حکومت کے طرف سے ووہان میں کورونا وائرس پھیلنے کے ابتدائی دنوں میں بتایا گیا تھا کہ یہ وائرس انسانوں سے انسانوں کو منتقل ہونے کی صلاحیت نہیں رکھتا جو کہ بعد ازاں غلط ثابت ہوا۔ اس کے علاوہ عالمی ادارہ صحت نے امریکی حکومت کو ہدایت کی تھی کہ اسے باقی دنیا کے ساتھ فضائی رابطہ ختم کرنے کی ضرورت نہیں کیونکہ وائرس انسانوں سے انسانوں کو لاحق نہیں ہوتا۔ ادارے کی ان غلط اطلاعات کو بنیاد بنا کر صدر ٹرمپ نے اس کی فنڈنگ منسوخ کی ہے۔

مزید : بین الاقوامی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے