’ایسا سمجھنا میری سب سے بڑی غلطی تھی‘ کورونا وائرس کا نشانہ بننے والے 25 سالہ نوجوان نے دیگر نوجوانوں کو مفید مشورہ دے دیا

’ایسا سمجھنا میری سب سے بڑی غلطی تھی‘ کورونا وائرس کا نشانہ بننے والے 25 سالہ نوجوان نے دیگر نوجوانوں کو مفید مشورہ دے دیا


’ایسا سمجھنا میری سب سے بڑی غلطی تھی‘ کورونا وائرس کا نشانہ بننے والے 25 سالہ …

’ایسا سمجھنا میری سب سے بڑی غلطی تھی‘ کورونا وائرس کا نشانہ بننے والے 25 سالہ نوجوان نے دیگر نوجوانوں کو مفید مشورہ دے دیا

  

ایڈنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) ماہرین نے طرف سے بتایا جا رہا ہے کہ کورونا وائرس صحت مند نوجوانوں کے لیے زیادہ خطرناک نہیں ہے اور ہمارے وزیراعظم عمران خان بھی یہی فقرہ دہراتے ہوئے قوم کو تسلی دے چکے ہیں لیکن سکاٹ لینڈ کے اس نوجوان کی کہانی کچھ اور ہی تصویر دکھا رہی ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سکاٹ لینڈ کے شہر پیسلے کا رہائشی کیلم وشرٹ بھی کورونا وائرس کے مقابلے میں خود کو ناقابل شکست سمجھتا تھا لیکن جب کورونا وائرس لاحق ہوا تو اسے موت اپنی آنکھوں کے سامنے نظر آنے لگی۔ اب بالآخر کیلم نے صحت مند ہونے کے بعد اعتراف کر لیا ہے کہ اس موذی وباءکے متعلق اس کی سوچ غلط تھی۔ اس نے دیگر نوجوانوں کو بھی تلقین کی ہے کہ وہ کورونا وائرس کو اتنا آسان مت لیں اور حکومتی ہدایات پر جی جان سے عمل کریں۔

کیلم وشرٹ نے بتایا کہ ”جب سکاٹ لینڈ میں کورونا وائرس کے کیس سامنے آنے شروع ہوئے تو میں سمجھتا تھا کہ میں چونکہ صحت مند ہوں اور 25سال کا جوان ہوں چنانچہ مجھے اس سے کوئی خطرہ نہیں ہے۔ یہی وجہ تھی کہ میں نے حکومتی ہدایات نظر انداز کیں اور سماجی میل جول اسی طرح بے خوف و خطر جاری رکھا۔ میں کہتا تھا کہ کورونا وائرس میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتا۔ اس کے مقابلے میں میں ناقابل شکست ہوں لیکن جب مجھے وائرس لاحق ہوا تو تین دن بعد ہی میرے لیے سانس لینا اتنا دوبھر ہوگیا کہ ایک ایک سانس کے لیے مجھے جنگ لڑنی پڑ رہی تھی۔ ہر سانس کے ساتھ سینے میں تکلیف کی ایسی ٹیسیں اٹھتیں کہ اس کی بجائے مجھے موت آسان لگنے لگی۔ مجھے کھانسی کے ایسے شدید دورے پڑتے کہ لگتا جیسے ابھی میری جان نکل جائے گی۔ اگلے تین دن مجھے آکسیجن پررکھا گیا۔ میں خوش قسمت ہوں جو صحت مند ہو کر گھر واپس آ گیا ہوں۔میں دیگر نوجوانوں کو نصیحت کروں گا کہ وہ ایسی غلطی مت کریں جو میں نے کی۔ اس وائرس سے بچنے کی حتی الامکان کوشش کریں۔“

مزید : بین الاقوامی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے