” ایک ایک چیز کا ثبوت ہے میرے پاس” جہانگیر ترین کی عمران

" ایک ایک چیز کا ثبوت ہے میرے پاس" جہانگیر ترین کی عمران


” ایک ایک چیز کا ثبوت ہے میرے پاس” جہانگیر ترین کی عمران خان کو سنگین دھمکی، …

اسلام آباد (ویب ڈیسک) تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر خان ترین کو وزیراعظم عمران خان نے ذمہ داریوں سے الگ کر دیا اور اب سینئر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود نے دعویٰ کیا ہے کہ جہانگیر ترین نے  دھمکی دی ہے کہ میرے پاس ایک ایک چیز کا ثبوت ہے ، کس نے مجھ سے کتنے پیسے لیے یا کہاں کہاں خرچ کیے گئے ۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرا م میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر شاہد مسعود کاکہناتھاکہ موجودہ سیاسی صورتحال میں اکثریت رہنما محتاط ہوگئے ہیں، چپ ہوگئے ہیں لیکن جہانگیر ترین نے کافی لوگوں کو میسج بھیجا ہے ، عمران خان صاحب نے بھی بھیجا ہے کہ میرے ساتھ فیصلہ کرو کہ میرے ساتھ ہو یا نہیں؟ اور ان کی طرف سے میسج گیا ہے کہ بچو! ایک ایک چیز کا ثبوت ہے میرے پاس، کس کس نے مجھ سے کتنے پیسے لیے، میں نے کہاں کہاں خرچ کیے اور کس کس نے کیاباتیں کی ہیں وہ بھی میرے پاس موجود ہیں۔

ڈاکٹرشاہد مسعود کاکہناتھاکہ بڑی بدمزگی ہورہی ہے اور ریاست متحمل ہی نہیں،آج آپ تصور کریں کہ جہانگیر ترین ٹائیگرفورس کو ہیڈ کررہے ہوتے اور شاہ محمود قریشی کی بھی حمایت ہوتی ،  میرا خیال تھا کہ یہ معاملہ ٹھنڈا ہوجائے گا ایک آدھ دن میں لیکن یہ بہت خراب ہورہا ہے، عمران خان صاحب کہتے ہیں کہ ایک ہی دفعہ میں طے کروں، فارنزک ہورہی ہے،جہانگیر ترین صاحب نے بات کی کہ80 فیصد لوگ تو میں لایا ہوں،ادھر عمران خان صاحب کہتے ہیں کہ یہ پارٹی میری ہے تو اس میں یہ لے کر آیا، وہ کہتے ہیں آگے سے کہ میں واقعی نہیں لایا اور کیا انہوں نے میرے ساتھ بات نہیں کی تھی کہ سر ہمیں مشیر بنادیں، سر ہمیں پیسے دے دیں، یہ جو جیتنے والے کینڈیڈیٹس تھےان پر میرا تو مال لگا ہے ، میں نے تو پیسے کھلائے ہیں ،خان صاحب کو نہیں پتہ تھا جو میں لے کر آتا جارہا تھا، درمیان میں کچھ لوگوں نے پڑنے کی کوشش کی، کچھ معصوم سے لوگ تھے ،ان کو ادھر ادھر سے تھپڑ پڑے تو  جو درمیان میں پڑنے کی کوشش کررہے تھے وہ پیچھے ہٹ گئے،اکثریت چپ ہوگئے ہیں۔

ان کاکہناتھاکہ شہباز گل صاحب نے پہلے بات کی، فردوش عاشق اعوان صاحبہ نے بھی کی لیکن پھر خاموشی چھاگئی، اسی طرح شیخ رشید صاحب نے بھی بات کی لیکن شیخ صاحب نہیں چاہتے کہ معاملات اتنے بگڑ جائیں، اسد عمر صاحب بھی محتاط ہیں، انہوں نے بالکل بھی بات نہیں کی۔ پرویز خٹک ، اسد قیصر ، فواد چوہدری خاموش، عثمان بزدار پہلے ہی چپ تھے، شاہ محمود صاحب بالکل لاتعلق ہوگئے ہیں، جہانگیر ترین صاحب نے کافی لوگوں کو  میسج بھی بھیجا ہے۔

ادھر شیخ رشید احمد نے بھی کہا ہے کہ جہانگیر خان ترین تحریک انصاف کا اہم آدمی تھا ، ہے ،الیکشن میں ٹکٹوں کے مسئلے پر اس کا بڑا کردار تھا لیکن اس کے حق میں اپیل کا فیصلہ بھی نہیں آیا، ان کے پاس کوئی عہدہ بھی نہیں تھا، اگر وزیروں میں تھوڑی بہت لگی رہتی ہے تو یہ سارے لوگ عمران خان کی وجہ سے جیت کر آنے میں کامیاب ہوئے ، ان کا کوئی بیک گرائونڈ نہیں، عمران خان کا مسئلہ ہے ، وہ انہیں نہیں چھوڑے گا، اس نے اس کابینہ میں بھی کہا ، اصل میں فائل کا پیٹ تو بھرنا ہے ، ہماری ذمہ داری ہے اور یہ ہماری حکومت کی ذمہ داری ہے ۔ 

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے