جب تک ویکسین نہیں آجاتی خود کو کورونا وائرس سے کیسے محفوظ رکھا جائے؟ آپ بھی جانئے

جب تک ویکسین نہیں آجاتی خود کو کورونا وائرس سے کیسے محفوظ رکھا جائے؟ آپ بھی جانئے


جب تک ویکسین نہیں آجاتی خود کو کورونا وائرس سے کیسے محفوظ رکھا جائے؟ آپ بھی …

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) جب تک کورونا وائرس کی ویکسین نہیں آ جاتی، تب تک خود کو اس سے کیسے محفوظ رکھیں؟ برطانوی ماہرین نے اس سوال کا بہترین جواب دے دیا ہے۔دی مرر کے مطابق کوئین میری یونیورسٹی آف لندن کے پروفیسر ایڈریان مارٹن کا کہنا ہے کہ جب سے وائرس پھیلا ہے دنیا بھر میں طرح طرح کی افواہیں گردش کر رہی ہیں۔ ہمیں ان افواہوں پر کان نہیں دھرنے چاہئیں۔ فی الحال کورونا وائرس کا علاج نہیں ہے اور اس سے محفوظ رہنے کے دو بہترین طریقے ہیں۔ پہلا طریقہ باقاعدگی سے اچھی طرح ہاتھ دھونا اور سماجی میل جول سے گریز کرنا ہے اور دوسرا طریقہ اپنے مدافعتی نظام کو طاقتور بنانا ہے۔

پروفیسر ایڈریان کا کہنا تھا کہ پہلے طریقے سے آپ خود کو وائرس لاحق ہونے سے بچا سکتے ہیں اور دوسرے طریقے کو آپ خدانخواستہ وائرس میں مبتلا ہونے کی تیاری کہہ سکتے ہیں۔ اگر آپ اپنے مدافعتی نظام کو مضبوط بناتے ہیں تو کورونا وائرس لاحق ہونے پر آپ میں اس کی علامات زیادہ شدید نہیں ہوں گی اور آپ جلد صحت مند ہو جائیں گے۔ ہمیں وٹامن ڈی لینا چاہیے کیونکہ یہ وائرس اور بیکٹیریا کے خلاف مدافعتی نظام کو پروٹینز پیدا کرنے کی ترغیب دیتا ہے اور دفاع کا کام کرتا ہے۔ اسی لیے اس وٹامن کے لیے ’ڈی فار ڈیفنس‘ کی اصطلاح استعمال کی جاتی ہے۔اس کے ساتھ وٹامن سی کے سپلیمنٹ بھی لینے چاہئیں کیونکہ یہ وٹامن ہمارے مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔

پروفیسر ایڈریان نے مزید بتایا کہ ہماری جلد اور مقعد کی آنت بھی ہمارے مدافعتی نظام ہی کا حصہ ہیں۔ ان کی بہتری کے لیے ہمیں ایسے پھل اور سبزیاں استعمال کرنی چاہئیں جو فائبر سے بھرپور ہوں۔ تاکہ مقعد کی آنت میں موجود اچھے بیکٹیریا کی افزائش ہو۔ فائبر کی حامل خوراک وائرل بیماریوں کے خلاف مدافعتی نظام کو مضبوط بناتی ہیں۔اس کے علاوہ ہمیں ورزش کرنی چاہیے۔ تحقیق سے ثابت ہو چکا ہے کہ جو لوگ ہفتے میں 5سے زائد بار ورزش کرتے ہیں ان کو سانس کی نالی کی انفیکشنز ہونے کا خطرہ 43فیصد کم ہو جاتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ لہسن بھی وبائی امراض کے لیے بہت مفید چیز ہے۔ ہمیں یہ بھی ضرور استعمال کرنا چاہیے۔

مزید : تعلیم و صحت /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے