جن ملکوں میں بچوں کو یہ دوا دی جاتی ہے وہاں کورونا وائرس سے اموات 6 گنا کم، پاکستان بھی ان میں شامل، تازہ تحقیق میں حیران کن انکشاف

جن ملکوں میں بچوں کو یہ دوا دی جاتی ہے وہاں کورونا وائرس سے اموات 6 گنا کم، پاکستان بھی ان میں شامل، تازہ تحقیق میں حیران کن انکشاف


جن ملکوں میں بچوں کو یہ دوا دی جاتی ہے وہاں کورونا وائرس سے اموات 6 گنا کم، …

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) لگ بھگ ایک صدی قبل ’بی سی جی‘ نامی ویکسین ایجاد کی گئی تھی جو ایک عرصے تک پوری دنیا میں ہر بچے کو دی جاتی رہی اور کئی ممالک، بشمول پاکستان، میں اب بھی بچوں کو یہ ویکسین دی جاتی ہے۔ نئی تحقیق میں اب سائنسدانوں نے پاکستان اور دیگر ان ممالک، جہاں بچوں کو یہ ویکسین دی جا رہی ہے، کے متعلق ایک خوش کن دعویٰ کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں بتایا ہے کہ جن ممالک میں بچوں کواس ویکسین کے ٹیکے لگائے جا رہے ہیں ان میں کورونا وائرس کی وجہ سے اموات 6گنا کم ہو رہی ہیں۔

یہ تحقیق امریکی ادارے جان ہاپکنز بلوم برگ سکول آف پبلک ہیلتھ کے سائنسدانوں نے کی ہے، جس میں انہوں نے کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے 50ممالک کے ڈیٹا کا تجزیہ کیا۔ رپورٹ کے مطابق یہ ویکسین بچوں میں مدافعتی نظام کو مضبوط کرتی ہے، جن ممالک میں یہ ویکسین اب بھی دی جا رہی ہے وہاں لوگوں کا مدافعتی نظام اس قدر طاقتور ہے کہ وہ کورونا وائرس کے خلاف سخت مزاحمت کر رہا ہے جس کی وجہ سے وہاں اموات کم ہو رہی ہیں۔اس سے قبل ایک تحقیق میں یہ بھی بتایا گیا تھا کہ جس بچے کو یہ ویکسین دی جاتی ہے یہ اسے 60سال تک ٹی بی سے بچاتی ہے اور دیگر انفیکشنز سے بھی محفوظ رکھتی ہے۔

مزید : تعلیم و صحت /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے