حکومت ٹیکسٹائل سیکٹر کو ناجائز طور پریہ ریلیف نہیں دے سکتی،مشیر تجارت عبدالرازق داؤد نے دوٹوک اعلان کر دیا

حکومت ٹیکسٹائل سیکٹر کو ناجائز طور پریہ ریلیف نہیں دے سکتی،مشیر تجارت عبدالرازق داؤد نے دوٹوک اعلان کر دیا


حکومت ٹیکسٹائل سیکٹر کو ناجائز طور پریہ ریلیف نہیں دے سکتی،مشیر تجارت …

حکومت ٹیکسٹائل سیکٹر کو ناجائز طور پریہ ریلیف نہیں دے سکتی،مشیر تجارت عبدالرازق داؤد نے دوٹوک اعلان کر دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مشیر تجارت عبدالرازق داؤد نے کہا ہے کہ حکومت ٹیکسٹائل سیکٹر کو ناجائز طور پر 15 ارب روپے کا ریلیف نہیں دے سکتی۔

نجی ٹی وی کے مطابق  مشیر تجارت عبد الرزاق داؤد  نے کہا ہے کہ کمپنیوں نے ڈالر کی قدر میں کمی کے باعث لالچ میں آکر سودے کیے،ڈالر کی قدر میں اچانک اضافے کے باعث کمپینوں کو 15 ارب روپے نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔انہوں نے کہا کہ کچھ ٹیکسٹائل کمپنیوں نے فیوچر ٹریڈنگ پر سودے کیے، کمپنیاں حکومت سے اپنے 15 ارب روپے کے نقصان کی تلافی چاہتی ہیں،کاروباری فیصلہ درست ثابت نہیں ہوا، کمپنیوں کا مطالبہ غیر منصفانہ ہے۔مشیر تجارت نے کہا کہ کمپنیوں کےخسارے کا معاملہ اعلیٰ حکومتی سطح پر بھی اٹھایا، اعلیٰ سطح کے اجلاس میں کمپنیوں کے بارے میں میرے موقف کی تائید کی گئی،عوام کے پیسے سے 15 ارب روپے کا خسارہ پورا نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید : بزنس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے