’دھونی بزنس کلاس کی اپنی سیٹ چھوڑ کر اکانومی کلاس میں بیٹھتے تھے‘ سنیل گواسکر نے سابق بھارتی کپتان کی شخصیت کا انتہائی حیران کن پہلو بے نقاب کردیا

’دھونی بزنس کلاس کی اپنی سیٹ چھوڑ کر اکانومی کلاس میں بیٹھتے تھے‘ سنیل گواسکر نے سابق بھارتی کپتان کی شخصیت کا انتہائی حیران کن پہلو بے نقاب کردیا


’دھونی بزنس کلاس کی اپنی سیٹ چھوڑ کر اکانومی کلاس میں بیٹھتے تھے‘ سنیل …

’دھونی بزنس کلاس کی اپنی سیٹ چھوڑ کر اکانومی کلاس میں بیٹھتے تھے‘ سنیل گواسکر نے سابق بھارتی کپتان کی شخصیت کا انتہائی حیران کن پہلو بے نقاب کردیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق بھارتی کپتان ایم ایس دھونی کرکٹ میں اپنی شاندار پرفارمنس کے علاوہ اپنی سادہ مزاجی اور دھیمے روئیے کی وجہ سے بھی شہرت رکھتے ہیں۔ اب لیجنڈ کرکٹر سنیل گواسکر نے اپنے ایک آرٹیکل میں ایم ایس دھونی کی شخصیت کے اسی پہلو کا ایک متاثر کن واقعہ سنا دیا ہے۔ ویب سائٹ ’کرِک ٹریکر‘ کے مطابق سنیل گواسکر نے لکھا ہے کہ بھارتی ٹیم کو یہ لگژری حاصل ہوتی ہے کہ اندرون ملک فضائی سفر کے دوران جہاز کی محدود بزنس کلاس سیٹوں میں سے انہیں سیٹیں دی جاتی ہیں اور وہ بزنس کلاس میں سفر کرتے ہیں لیکن ایم ایس دھونی نے کبھی اس لگژری سے لطف اندوز ہونا گوارا نہیں کیا بلکہ ہمیشہ اپنی بزنس کلاس سیٹ چھوڑ کر ٹی وی عملے کے ساتھ اکانومی کلاس میں سفر کرتے تھے۔

سنیل گواسکر لکھتے ہیں کہ ”بھارتی بوڈ نے یہ ایک بہت خوبصورت روایت اپنا رکھی ہے کہ اندرون ملک ایک سپیشل چارٹرڈ پرواز کھلاڑیوں کو ایک سے دوسری جگہ لے کر جاتی ہے۔ اس پرواز میں بزنس کلاس کی محدود سیٹیں ہوتی ہیں۔ان سیٹوں پر ٹیم کا کپتان، کوچز ، منیجرز اور وہ کھلاڑی جنہوں نے گزشتہ میچوں میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہوتا ہے، انہیں بٹھایا جاتا ہے۔ باقی کھلاڑی اور ٹی وی عملہ اکانومی کلاس میں بیٹھتا ہے۔ ایم ایس دھونی نہ صرف ٹیم کے کپتان ہوتے تھے بلکہ کارکردگی کے لحاظ سے بھی سب سے اوپر ہوتے تھے اس کے باوجود وہ اس بزنس کلاس میں بیٹھنے کی بجائے ٹی وی عملے اور ٹیم کے ناقص کارکردگی دکھانے والے کھلاڑیوں کے ساتھ اکانومی کلاس میں بیٹھتے تھے۔ میں جانتا ہوں کہ اپنے پورے کیریئر میں مہندر سنگھ دھونی شاید ہی کبھی بزنس کلاس میں بیٹھتے ہوں۔“

مزید : کھیل



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے