سرمنڈوانے سے کورونا اثر نہیں کرے گا؟ کراچی کے شہریوں نے ایسا کام کردیا کہ آپ کی بھی ہنسی نہ رکے

سرمنڈوانے سے کورونا اثر نہیں کرے گا؟ کراچی کے شہریوں نے ایسا کام کردیا کہ آپ کی بھی ہنسی نہ رکے


سرمنڈوانے سے کورونا اثر نہیں کرے گا؟ کراچی کے شہریوں نے ایسا کام کردیا کہ آپ …

کراچی(ویب ڈیسک) شہر قائد کے علاقے ملیر کے میر ہزار خان جوکھیو گوٹھ کے باسیوں نے کرونا وائرس کا دلچسپ مگر مضحکہ خیز علاج ڈھونڈ لیا ،  تمام مردوں اور بچوں نے کرونا وائرس سے بچنے کے لیے سر منڈوا لیے، واضح رہے کہ سرمنڈوانے کا سائنسی طورپر وائر س سے کوئی تعلق نہیں اور نہ ہی سر کے بالوں سے وائرس جسم میں داخل ہوتا ہے ۔ 

علاقے کے 80 سے زائد مردوں اور بچوں کے سروں پر استرا پھروا لیا گیا، بعض بچوں کو پکڑ کر زبردستی ان کی ٹنڈ کرائی گئی، سر منڈوانے کے لیے گوٹھ کے لوگوں نے شہر سے خصوصی طور پر کرائے پر ایک حجام کو بلایا۔میر ہزار خان جو کھیو گوٹھ کے باسیوں کا کہنا تھا کہ سر منڈوانے کا سلسلہ جاری رہے گا، گوٹھ کے سبھی مردوں اور بچوں کی ٹنڈ کرائی جائے گی۔ انھوں نے دعویٰ کیا کہ سر منڈوانے سے کرونا وائرس سے بچ سکتے ہیں۔

اے آر وائے نیوز کے مطابق علاقے کے ایم پی اے نے بھی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ یہاں لوگ تیزی سے سر منڈوا رہے ہیں اور ان کا خیال ہے کہ اس طرح وہ وائرس سے محفوظ رہ سکیں گے۔ تاہم یہ معلوم نہیں ہو سکا کہ سر منڈوانے سے کرونا وائرس سے بچاؤ کیوں کر ممکن ہو سکے گا۔

خیال رہے کہ اس بات کا امکان ہے کہ سر کے بالوں کی وجہ سے کرونا وائرس آسانی سے پھیل سکتا ہو، تاہم اس نکتے کے بارے میں کہ ٹنڈ کرانے سے انسان کی قوت مدافعت میں اضافہ ہو سکتا ہے، طبی ماہرین ہی کچھ بتا سکتے ہیں۔تشویش ناک امر یہ ہے کہ گوٹھ کے افراد کے سر ایک ہی استرے سے منڈوائے گئے، جس سے ہیپاٹائٹس سی جیسے دیگر مہلک امراض کی منتقلی کا قوی خدشہ ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے