سعودی عرب میں سبزی اور پھل فروشوں کی آگئی شامت، حکام نے کڑا فیصلہ لے لیا

سعودی بادشاہ شاہ سلمان


سعودی عرب میں جان لیوا وائرس کورونا سے نمٹنے کے لیے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ اس سلسلے میں جگہ جگہ پر غیر قانونی طریقے سے سبزی اور پھل فروشوں کی بھی شامت آگئی ہے۔

ان ریڑھی بانوں میں زیادہ بڑی گنتی پاکستانیوں کی ہے۔سبق ویب سائٹ کے مطابق جدہ کے مشہور علاقے العزیزیہ میں ریڑھی بانوں کے خلاف بڑا کریک ڈاؤن کیا گیا ہے جس کا مقصد بھیڑ کو جمع ہونے سے روک کر کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا سدباب کرنا ہے۔

میونسپلٹی کے اس آپریشن کے دوران اہلکاروں نے پھلوں اور سبزیوں کی 300 ریڑھیاں ضبط کر لیں۔ ان پھل و سبزی فروشوں میں پاکستانیوں کی بھی بڑی گنتی شامل تھی۔ میونسپلٹی کے اس آپریشن کو پولیس کا بھی تعاون حاصل تھا۔ کریک ڈاؤن کے دوران مجموعی طور پر 9ٹن پھل اور سبزیاں ضبط کر کے انہیں فلاحی تنظیموں کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

اس حوالے سے بلدیاتی کونسل کے سیکرٹری انجینئر محمد الزہرانی نے بتایا کہ ایک مقامی شہری نے العزیزہ محلے میں ریڑھی بانوں سے متعلق ایک ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر جاری کی تھی، جس میں ریڑھی والوں کے آس پاس لوگوں کا بڑا ہجوم دکھایا گیا تھا۔

اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد صارفین کی جانب سے سخت ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے حکام سے مطالبہ کیا گیا تھا کہ ان ریڑھی بانوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا جائے کیونکہ یہ لوگ سماجی فاصلے کی پابندی کو خاطر میں نہیں لا رہے جس کے باعث کورونا کی وبا پھیلنے کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔

میونسپلٹی نے العزیزیہ میں مختلف مقامات پر ریڑھیوں پر سبزیاں اور پھل فروخت کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کرکے ان کا سامان ضبط کر لیا۔



install suchtv android app on google app store

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے