عدالت کا 17 سال بعد فیصلہ، ایم کیوایم رہنما عامر خان باعزت بری ہوگئے

ایم کیو ایم رہنما عامر خان


ایم کیو ایم رہنما عامر خان کی سزا کے خلاف اپیل پر سترہ سال بعد فیصلہ سنا دیا،عدالت نے عامر خان اور طارق کی سزا کالعدم قرار دے دی۔

سندھ ہائی کورٹ نے متحدہ قومی موومنٹ(ایم کیو ایم) کے رہنما عامر خان کی سزا کالعدم قرار دیتے ہوئے بری کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

عدالت نے عامر خان کی سزا میں توسیع کے لیے سرکار کی درخواست مسترد کردی۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نے عامر خان کو10برس اور ملزم طارق کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔

ملزمان پر ایم کیوایم کے کارکنوں پر فائرنگ کرنے کا الزام تھا، جس کے نتیجے میں دو کارکن جاں بحق ہوگئے تھے۔

خیال رہے کہ ایم کیو ایم کے سابق کنوینئر فاروق ستار کے حلقہ انتخاب میں الیکشن کے دوران متحدہ کے کارکن انعم عزیز اور نعیم قتل ہوگئے تھے۔

عامر خان اس وقت ایم کیو ایم حقیقی کے جنرل سیکرٹری تھے اور انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے عامر خان کو 10 سال قید کی سزا سنائی تھی۔



install suchtv android app on google app store

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے