”عمران خان نے 93ءمیں سازش کے تحت جاوید میانداد کو ٹیم سے نکلوایا اور۔۔۔“ باسط علی نے حیران کن انکشاف کر دیا

”عمران خان نے 93ءمیں سازش کے تحت جاوید میانداد کو ٹیم سے نکلوایا اور۔۔۔“ باسط علی نے حیران کن انکشاف کر دیا


”عمران خان نے 93ءمیں سازش کے تحت جاوید میانداد کو ٹیم سے نکلوایا اور۔۔۔“ …

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کھلاڑی باسط علی نے انکشاف کیا ہے کہ 92 ءکے ورلڈکپ وننگ کپتان اور موجودہ وزیراعظم پاکستان عمران خان نے جاوید میانداد کو ٹیم سے نکالنے کیلئے سازش رچائی۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ”1993ءمیں جاوید میانداد کو قومی ٹیم سے نکالنے کیلئے ایک سازش رچائی گئی اور اس وجہ سے ہی میرا موازنہ ان کیساتھ کیا جانے لگا۔ ایمانداری کی بات تو یہ ہے کہ میں جاوید میانداد کا ایک فیصد بھی نہیں تھا اور نمبر چار پر بیٹنگ کرتا تھا اور جب میانداد کو نکالا گیا تو مجھے نمبر چھ پر بھیج دیا گیا۔ جب میں چوتھے نمبر پر بیٹنگ کرتا تھا تو میری اوسط 55 تھی اور چھٹے نمبر پر جانے کے بعد میری کارکردگی کا گراف نیچے آ گیا، وہ جانتے تھے کہ اس پوزیشن پر مجھے مشکل سے ہی بیٹنگ کا موقع ملا کرے گا۔“

انہوں نے بتایا کہ ”اس وقت وسیم اکرم ٹیم کے کپتان تھے لیکن میانداد کے ٹیم سے نکالے جانے کا ذمہ دار وہ تھا جو حکم جاری کرتا تھا اور وہ عمران خان تھے۔ میانداد کو 1996ءکے ورلڈکپ کیلئے قومی سکواڈ میں شامل نہیں کیا گیا تھا لیکن میں 15 رکنی سکواڈ کا حصہ تھا۔ جاوید میانداد نے سکواڈ میں شامل کھلاڑیوں سے درخواست کی کہ وہ ورلڈکپ کھیلنا چاہتے ہیں کیونکہ وہ سب سے زیادہ میگاایونٹس کھیلنے کا ریکارڈ بنانا چاہتے ہیں، لہٰذا میں دستبردار ہو گیا ۔ اس وقت میں کیرئیر کے عروج پر تھا لیکن پھر بھی میں نے قومی سکواڈ میں اپنی جگہ کی قربانی دیدی کیونکہ میں جاوید میانداد کی بہت عزت کرتا تھا۔“

مزید : کھیل



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے