"عمران خان کا مذاق اڑانے والے آج شرمندہ تو ہورہے ہوں

"عمران خان کا مذاق اڑانے والے آج شرمندہ تو ہورہے ہوں


"عمران خان کا مذاق اڑانے والے آج شرمندہ تو ہورہے ہوں گے” شہباز گل نے حیران کن …

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) عالمی مالیاتی ادارے اور ترقی یافتہ ممالک کی جانب سے ترقی پذیر ممالک کیلئے قرضوں میں ریلیف کے معاملے پر ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا ہے کہ اس خبر سے وہ لوگ ضرور شرمندہ ہورہے ہوں گے جو عمران خان کا مذاق اڑاتے تھے۔

پی ٹی آئی رہنما ڈاکٹرشہباز گل  نے ایک خبر کا عکس شیئر کیا جس میں  بتایا گیا ہے کہ لاک ڈاؤن 2022 تک چل سکتا ہے۔ اس پر تبصرہ کرتے ہوئے شہباز گل نے کہا کہ ” کیا کوئی امیر سے امیر ملک بھی 2022 تک لاک ڈاؤن کر سکتا ہے؟ یقیناً یہ نا ممکن ہے اور یہی بات خان صاحب کہتے رہے ہیں کہ ہمیں مناسب  انتظامات کے ساتھ اپنے روزگار کو چلانے کی پلاننگ کرنا ہے۔ ہمیں اپنے معمولات میں تبدیلی اور حفاظتی انتظامات کے ساتھ چیزوں کو مینیج کرنا ہے۔”

ایک اور ٹویٹ میں ڈاکٹر شہباز گل نے جی 20 ممالک کی جانب سے قرض ریلیف کا اعلان کرنے کی خبر شیئر کرتے ہوئے کہا ” عمران خان صاحب نے سب سے پہلے اس موضوع پر آواز اٹھائی۔ نا صرف پاکستان بلکہ تیسری دنیا کہ دوسرے پسے ہوئے طبقے کی آواز بھی بنے۔ یہی مواقع ہوتے ہیں جب اقوام کو اعلی پائے کے لیڈرز کی ضرورت ہوتی ہے جو اپنے اور اپنی قوم کے مفادات کے ساتھ ساتھ سب کی آواز بنے۔”

ڈاکٹر شہباز گل نے آئی ایم ایف کی جانب سے قرضوں میں ریلیف کی فراہمی کے معاملے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ” عمران خان دنیا کے جی ہاں دنیا کے پہلے لیڈر تھے جنہوں نے عالمی مالیاتی اداروں سے ترقی پذیر ممالک کے لیے قرضوں کی ادائیگی میں ریلیف کا مطالبہ کیا۔کچھ لوگوں نے عمران خان اور پاکستان دشمنی میں مذاق اڑایا۔آج شرمندہ تو ہو رہے ہوں گے۔”

مزید :

قومیسیاستعلاقائیاسلام آباد



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے