عمرکوٹ: سندھ حکومت کی جانب سے لاک ڈائون سے متاثرہ افراد کے لیے صرف 7850 راشن بیگ مختص

عمرکوٹ: سندھ حکومت کی جانب سے لاک ڈائون سے متاثرہ افراد کے لیے صرف 7850 راشن بیگ مختص


عمرکوٹ: سندھ حکومت کی جانب سے لاک ڈائون سے متاثرہ افراد کے لیے صرف 7850 راشن بیگ …

عمرکوٹ(سید ریحان شبیر )دس لاکھ سےزائد نفوس آبادی والا تاریخی شہر عمرکوٹ میں  سندھ حکومت کی جانب سے لاک ڈائون سے متاثرہ افراد کےلیے صرف”7850″راشن بیگ مختص     شہری سماجی عوامی حلقوں کا اظہار حیرانگی ومایوسی کااظہارت۔

فصیلات کےمطابق سندھ  حکومت کی جانب سےآج صوبےبھرمیں لاک ڈاؤن کا تیرہواں روز    ہے مسلسل لاک ڈاؤن کےباعث پاکستان سمیت سندھ بھرہزاروں کی  تعداد میں افراد خصوصاً روزانہ اجرت والے پرکام کرنے والےغریب محنت کش مزدور سب سے زیادہ متاثر بےروزگار ہوئےہیں اب  سندھ حکومت کی ہدایات اور ضلعی انتظامیہ کوبھاری فنڈز جاری ہونےکےبعد ضلعی انتظامیہ نےان      مسحقین افراد کیلئے راشن بیگ گھر پہنچانے کا سلسلہ شروع کردیاہے مگرافسوس ناک امر   یہ  ہےکہ عمرکوٹ ضلع پاکستان اور    سندھ کاایک تاریخی شہرہے عمرکوٹ ضلع جس کی آبادی دس”10″لاکھ نفوس پر مشتمل ہے ۔

دس  لاکھ آبادی والےشہر عمرکوٹ کےلیے ڈپٹی کمشنر عمرکوٹ نےجو نوٹیفکیشن نمبر۔No -DC /uk /1055/2020جاری کیاہے اس میں عمرکوٹ ضلع بھر کی دس لاکھ سے زائد عوام کیلئے صرف 7850 راشن بیگ تقسیم کرنے کا نوٹیفکشن جاری کیاگیا ہے عمرکوٹ ضلع کی چاروں تحصیل عمرکوٹ  سامارو کنری اور پتھورو کے مسحقین افراد میں راشن بیگ تقسیم کیئے جارہےہیں جاری کیےگئے نوٹیفکیشن مطابق  پانچ لاکھ سے زائد آبادی والی تحصیل عمرکوٹ کیلئے 4129 راشن بیگ مختص کیئے گئے ہے جبکہ تعلقہ کنری کےلیے "1598” تعلقہ سامارو کےلیے "1246”جبکہ تعلقہ پتھورو کےلیے”878″راشن بیگ مختص کیےگئے ہیں ۔

عمرکوٹ کےسماجی شہری اور    ضلع کی عوام نے سندھ حکومت کے فیصلے حیرت اور افسوس مایوسی  کا اظہار کیاہےکئی ایسے خاندان ہیں جو سرکاری امداد سے رہ جائیں گے عوامی حلقوں نے وزیراعلیٰ  سندھ اور  حکومت کو ریلیف پیکج میں اضافہ کرنا چاہیئے تاکہ ہرغریب اور ضرورت مند کو راشن بیگ مل سکے۔

مزید : علاقائی /سندھ /عمرکوٹ



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے