لاک ڈاؤن سے فضائی آلودگی ختم، مقبوضہ کشمیر کے پہاڑ کتنے کلومیٹر دور سے نظر آنے لگے؟

لاک ڈاؤن سے فضائی آلودگی ختم، مقبوضہ کشمیر کے پہاڑ کتنے کلومیٹر دور سے نظر آنے لگے؟


لاک ڈاؤن سے فضائی آلودگی ختم، مقبوضہ کشمیر کے پہاڑ کتنے کلومیٹر دور سے نظر …

سیالکوٹ(ڈیلی پاکستان آن لائن) دنیا بھر میں کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والے لاک ڈاؤن کے باعث فضائی آلودگی ختم ہوگئی ہے اور فطرت نے اپنے حسین رنگ کھول کر رکھ دیے ہیں۔ دنیا بھر میں لوگ آلودگی کے خاتمے کے باعث سینکڑوں کلومیٹر دور سے پہاڑوں کو دیکھنے کے قابل ہوگئے ہیں، پاکستان میں بھی کچھ ایسا ہی نظارہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔

پی ٹی آئی کے سوشل میڈیا کارکن ڈاکٹر فرحان ورک نے کچھ تصاویر شیئر کی ہیں جن کے بارے میں ان کا دعویٰ ہے کہ یہ سیالکوٹ سے لی گئی ہیں اور مقبوضہ کشمیر کے پہاڑوں کی ہیں۔انہوں نے لکھا ” یہ تصویریں سیالکوٹ سے لی گئی ہیں جہاں کئی سالوں کے بعد کشمیر کے پہاڑ فضا صاف ہونے کے بعد دوبارہ نظر آنا شروع ہوگئے۔”

آزاد کشمیر سے تعلق رکھنے والے ایک صحافی نے بتایا کہ یہ پہاڑ رجوری کے ہیں۔ خیال رہے کہ سیالکوٹ سے رجوری کا فاصلہ 91 کلومیٹر سے زائد ہے۔

انجینئر اشتیاق نامی صارف نے دعویٰ کیا کہ اسلام آباد کے علاقے روات سے بھی کشمیر کے پہاڑ دیکھے گئے ہیں تاہم انہوں نے کوئی تصویر اس دعویٰ کے ثبوت کے طور پر پوسٹ نہیں کی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /علاقائی /پنجاب /سیالکوٹ



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے