لاک ڈاؤن میں نرمی سے نقصان ہوسکتا ہے لہذا شہری ذمہ داری کا مظاہرہ کریں: ڈاکٹر ظفر مرزا

ڈاکٹر ظفر مرزا


معاونِ خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے خبردار کیا ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی سے نقصان ہوسکتا ہے لہذا شہری ذمہ داری کا مظاہرہ کریں۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ ’بعض حلقوں میں یہ بات زیر بحث ہے کہ پاکستان میں کرونا کے حوالے سے تخمینے غلط ثابت ہوئے ہیں‘۔

اُن کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کی نرمی کی وجہ سے کوئی غلط فہمی میں نہ رہے کیونکہ اس سے بڑا نقصان بھی ہوسکتا ہے، ہمیں اپنی ذمہ داریوں میں اضافہ کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید پڑھیں: کرونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ، کراچی کی 11 یونین کونسلز سیل، میئر لاعلم

ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ پاکستان میں دوسرےممالک کی طرح کیسزیا اموات اب تک رپورٹ نہیں ہوئی مگر اس کا یہ مطلب نہیں کہ معاملہ تھم گیا بلکہ یہ مسئلہ تاحال توجہ طلب ہے‘۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں اس وقت کرونا کے پچاس مریضوں کی حالت تشویشناک ہے اور وہ وینٹی لیٹر پر ہیں۔

یاد رہے کہ پاکستان میں کرونا وائرس کےمریضوں کی تعداد اضافے کے بعد 4ہزار892 تک پہنچ گئی۔ محکمہ صحت کے اعداد و شمار کے مطابق سب سے زیادہ کیسز پنجاب میں 2336، سندھ1318،گلگت بلتستان میں215، بلوچستان220،کے پی656، اسلام آباد 113 ، آزاد کشمیر 34 میں رپورٹ ہوئے۔

پاکستان میں کرونا سے مرنے والے افراد کی تعداد 77 تک پہنچ گئی جبکہ کرونا سے صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 762 تک پہنچ گئی۔



install suchtv android app on google app store

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے