لاک ڈاﺅن کے دوران ”زوم“ ایپلی کیشن استعمال کرنے والوں کیلئے انتہائی تشویشناک خبر آ گئی، جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں

لاک ڈاﺅن کے دوران ”زوم“ ایپلی کیشن استعمال کرنے والوں کیلئے انتہائی تشویشناک خبر آ گئی، جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں


لاک ڈاﺅن کے دوران ”زوم“ ایپلی کیشن استعمال کرنے والوں کیلئے انتہائی …

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) چین سے پوری دنیا میں پھیلنے والے کورونا وائرس کے باعث بیشتر ممالک میں لاک ڈاﺅن ہے اور لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں جو گھروں میں بیٹھ کر کام کرنے کیساتھ ساتھ تفریح اور معلومات کے حصول کیلئے بھی انٹرنیٹ پر انحصار کر رہے ہیں۔

اس صورتحال کے دوران ویڈیو کالنگ سافٹ وئیرز کے استعمال میں بے پناہ اضافہ دیکھنے میں آیا ہے اور ایسا ہی کچھ ”زوم“ نامی ایپلی کیشن کا معاملہ بھی ہے تاہم اسے استعمال کرنے والوں کیلئے انتہائی تشویشناک خبر ہے کہ اسے استعمال کرنے والے 5 لاکھ سے زائد صارفین کا ڈیٹا بدنام زمانہ ڈارک ویب پر فروخت کیا جا رہا ہے۔

زوم پر اس حملے کا انکشاف ایک سائبر سیکیورٹی فرم نے کیا ہے جن کا کہنا ہے کہ ایک ہیکر فورم پر زوم صارفین کے اکاؤنٹس کو خریداری کیلئے پیش کیا گیا ہے۔ان اکاؤنٹس کی قیمت اعشاریہ 1 یا 2 ڈالر رکھی گئی جبکہ اکاؤنٹس مفت میں بھی دئیے جارہے ہیں اور فرم کا کہنا ہے کہ ان اکاؤنٹس کی تعداد 5 لاکھ 30 ہزار ہے۔

مذکورہ سیکیورٹی فرم کے مطابق فروخت کئے جانے والے ڈیٹا میں پرسنل میٹنگز کے یو آر ایلز، ای میل ایڈریسز، پاسورڈز اور وہ ہوسٹ کیز شامل ہیں جن کے ذریعے ہیکر کسی بھی میٹنگ میں کسی بھی وقت شمولیت اختیار کرسکتے ہیں۔

مذکورہ انکشاف کے بعد زوم کے ترجمان کی جانب سے کہا گیا ہے کہ مختلف ویب سائٹس پر اس طرح کی کارروائیاں عام بات ہیں، اس سے وہ صارفین متاثر نہیں ہوں گے جو سنگل سائن ان کے اصول پر چلتے ہیں البتہ ان صارفین کو خطرہ ہوسکتا ہے جو بہت سے پلیٹ فارمز کے اکاؤنٹس کیلئے ایک ہی ای میل اور پاسورڈ استعمال کرتے ہیں۔

اس حوالے سے اس سے قبل امریکہ کی نیشنل سیکیورٹی ایجنسی بھی خبردار کر چکی ہے کہ مختلف پلیٹ فارمز کے علیحدہ اکاؤنٹس کیلئے ایک جیسی معلومات استعمال نہ کی جائیں۔ 2108ءمیں ایجنسی نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ اگر کسی ایک پلیٹ فارم پر آپ کا اکاؤنٹ ہیک ہوگیا ہو، اور آپ نے اسی اکاؤنٹ والا ای میل اور پاسورڈ دوسرے اکاؤنٹس کیلئے بھی مختص کر رکھا ہو، تو آپ کے تمام اکاؤنٹس اور ان کے ذریعے تمام معلومات خطرے میں ہیں۔

زوم کا کہنا ہے کہ کمپنی نے اس طرح کی کارروائیوں کو روکنے کیلئے متعدد انٹیلی جنس فرمز کی خدمات بھی حاصل کر رکھی ہیں، علاوہ ازیں صارفین کو احتیاطاً اپنے پاسورڈز تبدیل کرنے کی ہدایت بھی کردی گئی ہے۔دوسری جانب سائبر سیکیورٹی فرم کا کہنا ہے کہ ہیک کئے جانے والے اکاؤنٹس میں نہ صرف انفرادی اکاؤنٹس شامل ہیں، بلکہ بڑی کمپنیز کے اکاؤنٹس بھی شامل ہیں جن میں سے ایک امریکہ کا مالیاتی ادارہ سٹی بینک بھی ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے