مساجد میں پیش آنے والے ناخوشگوار واقعات کسی صورت برداشت نہیں۔۔۔جے یو آئی ف نے سندھ حکومت کو وارننگ دے دی

مساجد میں پیش آنے والے ناخوشگوار واقعات کسی صورت برداشت نہیں۔۔۔جے یو آئی ف نے سندھ حکومت کو وارننگ دے دی


مساجد میں پیش آنے والے ناخوشگوار واقعات کسی صورت برداشت نہیں۔۔۔جے یو آئی ف …

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) جمعیت علماءاسلام ف کے رہنماءقاری محمد عثمان نے کہا کہ جمعہ کو بعض علاقوں کی مساجد میں پیش آنے والے ناخوشگوار واقعات کسی صورت برداشت نہیں،پولیس اور دیگر اہلکار مساجد کے اندر گھس کر حالات خراب کرنے کے بجائے باہر گیٹوں کو کنٹرول کریں،انتظامیہ اور ائمہ مساجد بھر پور تعاون کریں گے،وائرس کی آڑ میں علماءاور مساجد کی بے توقیری برداشت نہیں کریں گے،حکومت سندھ اور اعلی پولیس افسران کے ساتھ جو معاملات طے ہوئے ہیں علمائے کرام کے تعاون سے،خود بعض ناتجربہ کار پولیس افسران غلط فہمی پیدا کررہے ہیں،مکمل تعاون کے باوجود آئمہ مساجد کی تذلیل اچھا عمل نہیں۔

قاری محمد عثمان نے کہا کہ کسی بھی علاقے کے ایس ایچ او کو دوران نماز مسجد میں داخل ہوکر گالم گلوچ سے احتراز کرنا چاہیئے، اس طرح حالات مزید خراب ہوتے ہیں،پوری قوم وائرس کی زد میں ہے لیکن اسکا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ پورے ملک کو چھوڑکر مساجد اور علماء کی خلاف کریک ڈاؤن کیا جائے،انتظامیہ کی ذمہ داری ہیکہ مساجد کے دروازوں پر اہلکار تعینات کرکے لوگوں کو روکیں نہ کہ مساجد کا تقدس پامال کرتے ہوئے لوگوں کو ہراساں کریں،انتظامیہ اپنی ذمہ داری پوری کرے ائمہ مساجد کو انکا کام کرنے دیاجائے۔خومخواہ کی افراتفری نہ پیدا کی جائے۔

قاری محمد عثمان نے شہر کے بعض علاقوں میں ہونے والے ناخوش گوار واقعات پر ایڈیشنل آئی جی کراچی غلام نبی میمن سے رابطہ کرکے ان مسائل پر درگزر سے کام لینے کی درخواست کے ساتھ یہ کہا کہ پولیس اہلکاروں کو مساجد کے اندر گھسنے سے روکنے اور گیٹوں کو کنٹرول کرنے احکامات صادر کریں۔علماءکرام آئمہ مساجد بھرپور تعاون کریں گے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے