میڈیکل سائنس کی بڑی کامیابی، ایچ آئی وی کا مریض مکمل صحت یاب ہوگیا

میڈیکل سائنس کی بڑی کامیابی، ایچ آئی وی کا مریض مکمل صحت یاب ہوگیا


میڈیکل سائنس کی بڑی کامیابی، ایچ آئی وی کا مریض مکمل صحت یاب ہوگیا

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایچ آئی وی اور ایڈز اب تک لاعلاج مرض ہیں لیکن اب ان کے علاج میں ایک بڑی کامیابی حاصل ہو گئی ہے اور پہلا مریض مکمل شفاءیاب ہو گیا ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس 40سالہ مریض کا نام ایڈم کاسٹیلیجو ہے جو وینزویلا کا شہری ہے لیکن لندن میں مقیم ہے۔ وہ ایک پیشہ ور شیف ہے۔ ایڈم میں ایچ آئی وی کی تشخیص 2003ءمیں 23سال کی عمر میں ہوئی تھی۔

بعد ازاں اسے بلڈکینسر بھی لاحق ہو گیا جس کے علاج کے لیے 2016ءمیں اس کا سٹیم سیل ٹرانسپلانٹ (Stem cell transplant)ہوا، جو اس کے لیے خوش قسمتی کا سبب بنا۔ جس شخص کے سٹیم سیلز اس کے جسم میں ٹرانسپلانٹ کیے گئے تھے اس میں ’ڈیلٹا 32‘ نام کی جینیاتی میوٹیشن تھی جو ایچ آئی وی کے خاتمے کا سبب بن گئی۔ اس میوٹیشن نے ایچ آئی وی کے خلاف ایسی مزاحمت کی کہ ایڈم کے جسم سے اس وائرس کا مکمل خاتمہ ہو گیا اور وہ صحت مند ہو گیا۔

قبل ازیں اسے صرف ’لندن مقیم شیف‘ کے نام سے میڈیا میں بتایا جاتا تھا لیکن صحت مند ہونے کے بعد اس نے اپنی شناخت ظاہر کر دی ہے۔ 30ماہ ہو گئے ہیں کہ اس میں ایچ آئی وی کے ایکٹو ہونے کے کوئی آثار نہیں ملے۔30ماہ سے ہی ایڈم نے ایچ آئی وی کی ادویات استعمال کرنی بھی بند کر رکھی ہیں۔

مزید : تعلیم و صحت



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے