نہ تو

نہ تو


نہ تو "ویرو”  روک  پایا اور نہ ہی 45 سال بعد  لاک ڈاؤن ، بسنتی کل بھی کتوں کے …

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بالی ووڈ کی سب سے مقبول فلم ” شعلے” کی ایک ایک بات ناظرین کو یاد ہے لیکن بسنتی کا ناچ تو کوئی چاہ کر بھی نہیں بھول پاتا، 45 سال پہلے بسنتی گبر کی دھمکی اور سامبھا کی پستول سے ڈر کر "کتوں کے سامنے ناچی” تو آج کی بسنتی اپنے شوق سے ہی اصلی کتوں کے سامنے ناچتی پائی گئی۔

1975 میں ریلیز ہونے والی بالی ووڈ فلم ” شعلے” آج بھی لوگوں میں اتنی ہی مقبول ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ انڈیا کے دورے پر گئے تو انہوں نے بھی اپنی تقریر میں اس فلم کا ذکر کیا تھا۔ اس تاریخی فلم کا ہر منظر ، اداکار، ڈائیلاگ مشہور ہوئی، جو لوگ اس فلم میں صرف کیمرے کے آگے سے بھی گزرے وہ بھی امر ہوگئے۔

اسی فلم کا ایک سین ہے جہاں گبر (امجد خان مرحوم) ویرو (دھرمیندر) کو اغوا کرلیتا ہے۔ اسی دوران بسنتی (ہیما مالنی) ویرو کو بچانے پہنچتی ہے لیکن گبر اسے بھی پکڑ لیتا ہے اور رقص کی فرمائش کرتا ہے۔ یہ فرمائش سن کر رسیوں میں جکڑا ویرو کہتا ہے ” بسنتی ! ان کتوں کے سامنے مت ناچنا” لیکن ویرو کی فریاد گبر کی سنگدلی اور سامبھا کی بندوق کی گولی کے آگے بے مول ہوجاتی ہے اور بسنتی کو ” جب تک ہے جاں، جانِ جہاں ، میں ناچوں گی” گانے پر ناچنا ہی پڑتا ہے۔

فلم کا یہ سین اور دھرمیندر کا وہ ڈائیلاگ آج بھی زبان زدِ عام ہے۔ اسی کو مد نظر رکھتے ہوئے ایک انڈین لڑکی نے ویڈیو بنائی ہے۔ سوشل میڈیا پر  وائرل ویڈیو میں نوجوان لڑکی  اصلی کتوں کے جھرمٹ کے بیچ میں ناچ رہی ہے۔ لاک ڈاؤن کے دوران سڑک پر کتوں اور اس "بسنتی” کے علاوہ کوئی نظر نہیں آرہا۔ آج کی بسنتی نے گانا بھی آج کےزمانے کا منتخب کیا اور کتوں کے سامنے دل کھول کر ناچی ۔ کتے بھی حیرت کے ساتھ "بسنتی” کو ناچتا ہوا دیکھتے رہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے