پاکستان میں کورونا کے کیسز میں اضافہ، دنیا میں ہلاکتیں  90 ہزار ہوگئیں، مسلم امہ سے  بھی تشویشناک خبرآگئی

پاکستان میں کورونا کے کیسز میں اضافہ، دنیا میں ہلاکتیں  90 ہزار ہوگئیں، مسلم امہ سے  بھی تشویشناک خبرآگئی


پاکستان میں کورونا کے کیسز میں اضافہ، دنیا میں ہلاکتیں  90 ہزار ہوگئیں، مسلم …

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے جبکہ دنیا میں بھی اس وبا کی تباہ کاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پاکستان میں کورونا کے 140 نئے کیسز سامنے آئے ہیں جس کے بعد ملک میں کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد بڑھ کر 4462 ہوگئی ہے۔  گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پاکستان میں کورونا کے 5 مریض جاں بحق ہوئے ہیں جس کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 63 ہوگئی ہے۔ مجموعی طور پر 572 لوگ ایسے بھی ہیں جو کورونا وائرس سے صحتیاب ہوئے ہیں جبکہ 31 لوگوں کی حالت تشویشناک ہے۔ پاکستان میں  24 گھنٹوں کے دوران 2 ہزار 737 افراد کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں جس کے بعد اب تک کیے گئے ٹیسٹوں کی تعداد 44 ہزار  896 ہوگئی ہے۔

صوبوں کی صورتحال

پاکستان کے صوبہ پنجاب میں  اب تک کورونا وائرس کے سب سے زیادہ کیسز سامنے آئے ہیں، یہاں کورونا کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2214 ہوگئی ہے۔ صوبہ سندھ میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 1128 ہے جبکہ خیبر پختونخوا میں 560 ، گلگت بلتستان میں 213، بلوچستان میں 212 ، اسلام آباد میں 102 اور آزاد جموں و کشمیر میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 33 ہوچکی ہے۔

دنیا کی صورتحال

دنیا کے لگ بھگ تمام ممالک میں کورونا وائرس کی وبا پھیلی ہوئی ہے ، جو ممالک  کورونا کی وباسے خود کو محفوظ ظاہر کر رہے ہیں ان پر الزام ہے کہ وہ حقائق چھپا رہے ہیں۔ دنیا میں اب تک مجموعی طور پر کورونا وائرس کے 15 لاکھ 37 ہزار 954 کیسز سامنے آئے ہیں جبکہ ہلاکتوں کی تعداد 89 ہزار 957 ہوگئی ہے۔ پوری دنیا میں 3 لاکھ 40 ہزار 452 لوگ کورونا کی وبا سے اب تک صحتیاب ہوئے ہیں۔

کیسز کے اعتبار سے عالمی سپر پاور امریکہ کورونا سے سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جہاں اس وبا کے اب تک 4 لاکھ 35 ہزار 780 کیسز سامنے آئے ہیں ۔ اس وبا کی وجہ سے  امریکہ میں 14 ہزار 865 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

کورونا وائرس کی وجہ سے اموات کے اعتبار سے یورپی ملک اٹلی پہلے نمبر پر ہے جہاں اب تک 17 ہزار 669 لوگ اس کی وجہ سے زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ مریضوں کی تعداد کے اعتبار سے اٹلی تیسرے نمبر پر ہے اور یہاں  ایک لاکھ  39 ہزار 422 لوگوں میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔

یورپی ملک سپین کورنا کے مصدقہ کیسزاور اموات کے اعتبار سے دوسرے نمبر پر ہے۔ یہاں اب تک 1 لاکھ 52 ہزار 446 افراد کورونا سے متاثر ہوئے ہیں جبکہ 15 ہزار 328 لوگ جان کی بازی ہارے ہیں۔

مسلم امہ کی صورتحال

مسلم امہ میں ایران کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جہاں کورونا کے کیسز کی تعداد 66 ہزار 220 ہوگئی ہے جبکہ 4 ہزار 110 لوگ اس وبا کے باعث زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ برادر اسلامی ملک ترکی میں اب تک کورونا کے 38 ہزار 226 کیسز سامنے آئے ہیں اور یہاں 812 افراد کورونا کی وجہ سے جاں بحق ہوئے ہیں۔مسلمان ممالک میں کورونا کے مثبت کیسز کے حوالے سے پاکستان تیسرے نمبر پر ہے۔ کورونا کے مثبت کیسز کے اعتبار سے مسلم امہ میں ملائیشیا چوتھے، انڈو نیشیا پانچویں، سعودی عرب چھٹے ، متحدہ عرب امارات ساتویں اور قطر آٹھویں نمبر پر ہے۔

احساس پروگرام

حکومت کی جانب سے احساس پروگرام کے تحت مستحق خاندانوں میں 12 ہزار روپے فی خاندان کے حساب سے رقوم کی تقسیم کا سلسلہ جمعرات سے شروع ہوگیا ہے۔ آئندہ چند روز کے دوران ایک کروڑ 20 لاکھ خاندانوں میں 144 ارب روپے تقسیم کیے جائیں گے۔

لاک ڈاؤن میں نرمی کب ہوگی؟

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے غریب طبقہ بہت زیادہ متاثر ہوا ہے، 14 اپریل کو صوبوں سے مشاورت کے بعد لاک ڈاؤن میں نرمی کے حوالے سے غور کیا جائے گا۔

ریلیف فلائٹس میں مزید ممالک کا اضافہ

پی آئی اے نے کرونا کی وجہ سے بیرون ملک پھنسے پاکستانیوں کو واپس لانے کیلئے ریلیف فلائٹس میں مزید ملکوں کا اضافہ کر دیا۔ ڈنمارک ، آذربائیجان ، ملائیشیا،  فرانس ، جاپان اور تھائی لینڈ میں پھنسے پاکستانیوں کو آئندہ چند روز میں واپس لایا جائے گا۔

بہارہ کہو اور شہزاد ٹاؤن کلیئر قرار

اسلام آباد انتظامیہ نے 23 مارچ سے سیل بہارہ کہو اور شہزاد ٹاؤن کا 99 فیصد علاقہ کلیئر قرار دیتے ہوئے کھول دیا تاہم کوٹ ہتھیال کی متاثرہ مساجد اور اردگرد کی گلیاں بند رہیں گی، شہزاد ٹاؤن کی گلی نمبر 6 بھی بدستور بند رہے گی، 5 غیر ملکیوں کو تبلیغی جماعت کے عہدیداروں کے سپرد کر دیا گیا ہے۔

ملتان قرنطینہ سے آنے والے 56 افراد میں کورونا

گوجرانوالہ میں ملتان سے آئے زائرین کے دوبارہ میڈیکل ٹیسٹ کرنے پر 56 افراد کی رپورٹس پازیٹو آ گئیں، تمام افراد کو ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

کورونا کی اگلی منزل د یہی علاقے

ماہرین نے خبر دار کیا ہے کہ دیہی علاقے موثر انفراسٹرکچر کی کمی کی وجہ سے شدید خطرے میں ہیں، کورونا کی اگلی منزل د یہی علاقے ہیں ،جس سے مریضوں کی تعداد میں اچا نک بڑا اضا فہ سامنے آنے کا خطرہ ہے۔ یونین کونسل سطح پرزرعی کارکنوں اور دیہی معیشت کے تحفظ کی ضرورت ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے