پاکستان کا وہ نجی بینک جس کے 23ملازمین میں کورونا وائرس کے شبہ کے باعث برانچ ہی بند کرنا پڑگئی

پاکستان کا وہ نجی بینک جس کے 23ملازمین میں کورونا وائرس کے شبہ کے باعث برانچ ہی بند کرنا پڑگئی


پاکستان کا وہ نجی بینک جس کے 23ملازمین میں کورونا وائرس کے شبہ کے باعث برانچ …

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)بینک الفلاح کے 23ملازمین میں کورونا وائرس کے شبہ میں لاہور کی ایک برانچ بند کردی گئی۔

انگریزی جریدے’پاکستان ٹوڈے‘ کے مطابق بدھ کو نجی ٹی وی چینل سما نیوز نے بتایا تھا کہ ایک نجی بینک کے 23ملازمین میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی تاہم چینل نے نام نہیں لیاتھا، تاہم بینک الفلاح کی طرف سے بھیجی گئی ایک ای میل میں بتایاگیاکہ کورونا وائرس کے 23مشتبہ مریض ہیں، ان میں سے 17کیسز شاہ دین منزل برانچ لاہور میں ہیں جو پنجاب میں موجود مین برانچز میں سے ایک ہے۔ مزید بتایاگیاکہ شاہ دین منزل برانچ بدھ کو بند کردی گئی اور چند روزمزید بندش متوقع ہے ۔

ان کے علاوہ پانچ مشتبہ مریض کراچی برانچزایم اے جناح روڈ، ایف بی ایریااور ملیر سٹی میں ہیں ، ایک مشتبہ کیس آئی بی جی کوئٹہ برانچ میں رپورٹ ہوا۔ ای میل میں مزید بتایاگیاکہ لاہور برانچ میں سٹاف کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ طورپرقرنطینہ میں چلے جائیں اور ٹیسٹ بھی کروائیں، یہی ہدایات ملیر سٹی برانچ کو بھی دی گئی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق یہ واضح نہیں ہوسکا کہ بینک نے ملازمین کو کیسے مشتبہ کیسز قرار دیا،بہت سے بینک ملازمین کے بینک کی حدود میں داخلے سے قبل جسم کا درجہ حرارت چیک کررہے ہیں۔ یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ سٹیٹ بینک نے بینکوں کواجازت دی ہے کہ پاکستان بھر میں کھلے رہیں تاہم ضروری سٹاف کو بلانے کی اجازت دی گئی۔

مزید : بزنس /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے