پاکستان کا کالعدم داعش کے لیڈر ’ ’ اسلم فاروقی “ کی حوالگی کا مطالبہ، افغانستان نے نہایت حیران کن جواب دیدیا

پاکستان کا کالعدم داعش کے لیڈر ’ ’ اسلم فاروقی “ کی حوالگی کا مطالبہ، افغانستان نے نہایت حیران کن جواب دیدیا


پاکستان کا کالعدم داعش کے لیڈر ’ ’ اسلم فاروقی “ کی حوالگی کا مطالبہ، …

کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن )افغانستان نے پاکستان کا کالعدم داعش کے لیڈر اسلم فاروقی کی حوالگی کا مطالبہ مسترد کر دیا ہے ۔

” ایکسپریس ٹریبیون “ کی رپورٹ کے مطابق 4 اپریل کو افغانستان کی خفیہ ایجنسی ” این دی ایس “ نے اعلان کیا تھا کہ انہوں نے صوبہ کندھار میں ایک کارروائی کے دوران کالعدم داعش کے لیڈر اسلم فارقی کو گرفتار کر لیاہے جس کا حقیقی نام ” عبداللہ اورکزئی “ ہے ۔

افغان وزارت خارجہ نے پاکستان کے مطالبے کو مسترد کرتے ہوئے بیان دیا کہ اسلم فاروقی سینکڑوں افغانیوں کے قتل میں ملوث ہے اس لیے اس کا ٹرائل افغان قانون کے مطابق ہو گا ۔یہ بات بھی سامنے آئی کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان قیدیوں کی حوالگی کا کوئی معاہدہ نہیں ہے جس کے باعث کابل پر ایسی کوئی ذمہ داری عائد نہیں ہوتی کہ وہ آئی ایس خراسان کے چیف کو پاکستان کے حوالے کرے ۔

یاد رہے کہ پاکستان نے افغانستان سے آئی ایس آئی ایس لیڈر اسلم فاروقی کی حوالگی کا مطالبہ کیا تھا۔ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر عائشہ فاروقی کے مطابق افغان سفیر کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا اور پاکستان نے آئی ایس آئی ایس لیڈر اسلم فاروقی کی گرفتاری پر اپنے موقف سے آگاہ کیا۔

افغان سفیر کی دفتر خارجہ طلبی کے دوران دہشتگردی کے خاتمے کے لیے دونوں ممالک کے تعاون بڑھانے پر زور دیا گیا۔دفتر خارجہ طلبی کے دوران افغان سفیر سے مطالبہ کیا گیا کہ داعش کے دہشتگرد اسلم فاروقی کو پاکستان کے حوالے کیا جائے۔ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ پاکستان اسلم فاروقی گروپ کی کارووائیوں پر اپنی تشویش سے افغانستان کو آگا ہ کرتا رہا ہے، اس گروپ کی سرگرمیاں پاکستان کے لیے نقصان دہ تھی۔ڈاکٹر عائشہ فاروقی کے مطابق اسلم فاروقی افغانستان میں پاکستان مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہے، پاکستان اسلم فاروقی سے تحقیقات کرنا چاہتا ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے