پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں لاک ڈاؤن کے حوالے سے اہم ترین فیصلہ کر لیا

پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں لاک ڈاؤن کے حوالے سے اہم ترین فیصلہ کر لیا


پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں لاک ڈاؤن کے حوالے سے اہم ترین فیصلہ کر لیا

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب حکومت نےکورونا وائرس پر قابو پانے اور مریضوں کے علاج کیلئے کاوشوں کو مزید تیز کرنے کا فیصلہ  کرتے ہوئےصوبے بھر میں لاک ڈاؤن پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنانے کا فیصلہ کر لیا،کوروناسےمتاثرہ علاقوں کو کلیئر ہونے تک سیل رکھا جائے گا، دفعہ 144 کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائےگی،خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف قانونی کارروائی ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان کی زیر صدارت خصوصی اجلاس ہوا،جس میں کورکمانڈرلاہورلیفٹیننٹ جنرل ماجداحسان، ڈی جی رینجرزپنجاب میجرجنرل عامرمجید، چیف سیکرٹری اعظم سلیمان،آئی جی پولیس شعیب دستگیر نے شرکت کی۔اجلاس کے دوران صوبے میں کورونا وائرس کی صورتحال اور حفاظتی اقدامات کا جائزہ لیا گیا جبکہ متاثرہ مریضوں کےعلاج معالجے کے انتظامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔اجلاس میں پاک فوج، رینجرز، پولیس اہلکاروں، ڈاکٹرز، پیرامیڈیکل سٹاف کی خدمات کو خراج تحسین پیش کیا گیا۔ کور کمانڈر لاہور ماجد احسان نے حفاظتی اقدامات اور دیگر امور پر تعاون کی یقین دہانی کرائی۔اجلاس کے دوران کورونا پر قابو پانے اور مریضوں کے علاج کیلئے کاوشوں کو مزید تیز کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ پنجاب میں لاک ڈاؤن پرسختی سےعملدرآمدیقینی بنانے پر بھی اتفاق کیا گیا۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے اقدامات جاری رکھے جائیں گے جبکہ صوبے میں لاک ڈاؤن میں مزید توسیع پر بھی غورکیا گیا اور اس حوالے سے تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس کےدوران فیصلہ کیاگیاکہ کوروناسےمتاثرہ علاقوں کو کلیئر ہونے تک سیل رکھا جائے گا، دفعہ 144 کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جائےگی اور  خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف قانونی کارروائی ہوگی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئےوزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ روزانہ 3100 کورونا ٹیسٹ کرنے کی صلاحیت حاصل کرلی ہے،ہسپتالوں میں ڈاکٹرز اورطبی عملےکیلئےحفاظتی اقدامات کررہےہیں، پنجاب میں مستحق افرادکو 12ہزارروپےمالی امداددیں گے،غریب طبقےکےریلیف کیلئےمالی امدادکاپروگرام شروع ہو چکا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ قیدیوں کی سکریننگ کاعمل شروع کردیاگیاہے۔ 3 لیبارٹریز جلد فنکشنل ہو جائیں گی۔ کوروناکی تشخیص کیلئے 8نئی لیبارٹریز بنا رہے ہیں، ٹیسٹنگ سہولت کی استعدادکار10ہزارتک بڑھائی جائےگی۔سردار عثمان بزدارکاکہناتھاکہ ،گندم کٹائی مہم کاآغازہوچکاہے، رواں سال45لاکھ میٹرک ٹن گندم خریدنےکاہدف مقررکیاہے، صوبےمیں گندم کے وافر ذخائر موجود ہیں،کاشتکاروں سے1400روپےفی من گندم خریدی جائےگی۔

مزید : اہم خبریں /قومی /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے