پنجاب کے بعد خیبر پختونخوا کے سرکاری ہسپتالوں میں بھی وینٹی لیٹرز کی کمی، پی ٹی آئی کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگ گیا

پنجاب کے بعد خیبر پختونخوا کے سرکاری ہسپتالوں میں بھی وینٹی لیٹرز کی کمی، پی ٹی آئی کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگ گیا


پنجاب کے بعد خیبر پختونخوا کے سرکاری ہسپتالوں میں بھی وینٹی لیٹرز کی کمی، پی …

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سپریم کورٹ میں از خود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران انکشاف ہوا ہے کہ خیبر پختونخوا کے سرکاری ہسپتالون میں وینٹی لیٹرز کی شدید کمی ہے۔

خیبر پختونخوا حکومت کی جانب سے جمع کرائی گئی رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ صوبے کے ڈی ایچ کیو ہسپتالوں میں صرف 55 وینٹی لیٹرز موجود ہیں۔ صوبائی حکومت نے سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں کہا ہے کہ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں میں وینٹی لیٹرز کی تعداد کو بڑھا کر 150 کیا جارہا ہے۔

خیال رہے کہ چیف جسٹس گلزار احمد نے صحت کی سہولیات پر از خود نوٹس لیا تھا جس پر وفاقی اور صوبائی حکومتوں نے اپنی رپورٹس جمع کرائی ہیں۔21 دسمبر 2019 کو چیف جسٹس بننے والے جسٹس گلزار کا یہ پہلا از خود نوٹس ہے۔

دوسری جانب پنجاب حکومت نے بھی سپریم کورٹ میں اپنی رپورٹ جمع کرادی ہے جس میں یہ انکشاف ہوا ہے کہ پنجاب کی 11 کروڑ آبادی کیلئے ضلعی ہسپتالوں میں صرف 130 وینٹی لیٹرز ہیں۔ پنجاب حکومت کا کہنا ہے کہ ضلعی ہسپتالوں میں مزید 100 وینٹی لیٹرز جلد پہنچادیے جائیں گے۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے