پیدائش کے پہلے 4 ماہ بچے کو ماں کا دودھ پلانے کا ایسا فائدہ سامنے آگیا کہ جان کر ہر ماں بچے کو اپنا ہی دودھ پلائے

پیدائش کے پہلے 4 ماہ بچے کو ماں کا دودھ پلانے کا ایسا فائدہ سامنے آگیا کہ جان کر ہر ماں بچے کو اپنا ہی دودھ پلائے


پیدائش کے پہلے 4 ماہ بچے کو ماں کا دودھ پلانے کا ایسا فائدہ سامنے آگیا کہ جان …

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) پیدائش کے بعد بچے کے لیے ماں کے دودھ کا کوئی متبادل ممکن نہیں ہو سکتا۔ اب امریکی سائنسدانوں نے ایک تحقیق میں اس کا بچے کے لیے ایسا فائدہ بتا دیا ہے کہ سن کر ہر ماں بچے کو اپنا دودھ پلائے گی۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے اپنی تحقیق کے نتائج میں بتایا ہے کہ جن بچوں کو مائیں اپنا دودھ پلاتی ہیں ان کو پیدائش کے بعد چار ماہ تک وائرل انفیکشنز اور دیگر بیماریاں لاحق ہونے کا خطرہ کئی گنا کم ہوتا ہے۔

یونیورسٹی آف پنسلوانیا کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں124 بچوں پر تجربات کیے۔ان میں سے جن بچوں کو ماﺅں نے اپنا دودھ نہیں پلایا تھا اور انہیں شروع سے فارمولا دودھ پر پالا جا رہا تھا ان کو 4ماہ کی عمر تک وائرس لاحق ہونے کی شرح 30فیصد تھی۔ اس کے برعکس جن بچوں کو مائیں اپنا دودھ پلارہی تھیں ان میں سے صرف 9فیصد کو مختلف قسم کے وائرس لاحق ہوئے۔تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر فریڈرک بش مین کا کہنا تھا کہ ”اس تحقیق کے نتائج سے ہمیں یہ سمجھنے میں مدد مل سکتی ہے کہ پیدائش کے بعد پہلے چند مہینوں میں کچھ بچے زیادہ بیمار کیوں ہوتے ہیں اور ان میں ایسی انفیکشنز زیادہ کیوں ہوتی ہیں جن سے ان کی جان کو خطرہ لاحق ہوتا ہے۔“

مزید :

تعلیم و صحت



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے