پیپلزپارٹی کےحامی نوجوان کو اغوا کرنے والے مقدمے میں عدالت نے حلیم عادل شیخ کو18اپریل کودوبارہ طلب کرلیا

پیپلزپارٹی کےحامی نوجوان کو اغوا کرنے والے مقدمے میں عدالت نے حلیم عادل شیخ کو18اپریل کودوبارہ طلب کرلیا


پیپلزپارٹی کےحامی نوجوان کو اغوا کرنے والے مقدمے میں عدالت نے حلیم عادل شیخ …

عمرکوٹ(سید ریحان شبیر ) حلیم عادل شیخ اور ساتھیوں کی جانب سے پیپلزپارٹی کےحامی نوجوان کو اغوا کرنے والے مقدمے میں عدالت نے حلیم عادل شیخ کو18اپریل کودوبارہ طلب کرلیا۔

اس ضمن میں ملنےوالی تفصیلات کے مطابق جوڈیشل مجسٹریٹ کی جانب سے حلیم عادل شیخ کوحاضری سے چھوٹ "استثنیٰ” والے فیصلے کےخلاف فریادی در کی جانب سے نامور معروف ایڈووکیٹ پرشوتم کھتری اور محمد رحیم خاصخیلی کی معرفت داخل کی گی پٹیشن پر حلیم عادل شیخ پیش نہ ہوئے جس پر عدالت نے حلیم عادل شیخ کو اٹھارہ "18”اپریل کو دوبارہ طلب کر لیا مذکورہ کیس کی عدالت میں شنوائی ہوئی تو پولیس نے عدالت میں رپورٹ جمع کرائی کہ حلیم عادل شیخ پر عدالت کے نوٹس کی تعمیل نہیں ہوسکی عدالت میں حلیم عادل شیخ کےوکیل نےحاضر ہوکر درخواست دی کہ میرے کلائنٹ پر نوٹس کی تعمیل نہیں ہوسکی ہےجس پر وہ اپنے کلائنٹ کو آگاہ کرینگے جس پر عدالت نے حلیم عادل شیخ کو "18”اپریل کو طلب کرلیا ۔

مقدمے کے فریادی خالد جٹ نے اپنے ایڈووکیٹ کی معرفت ایڈیشنل سیشن جج ون عمرکوٹ کی عدالت میں پٹیشن میں موقف اختیار کیا کہ حلیم عادل شیخ تحریک انصاف کےایم پی اے ہیں مگر حلیم عادل شیخ نے ٹرائل کورٹ میں حاضری سےاستثنیٰ کی درخواست میں کہا گیا کہ حلیم عادل شیخ اپوزیشن جماعتوں کےسندھ اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر ہے جبکہ سندھ اسمبلی میں اپوزیشن جماعتوں کےپارلیمانی لیڈر فردوس شمیم نقوی ہے.

مزید : علاقائی /سندھ /عمرکوٹ



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے