کراچی کے ہسپتالوں میں بڑی تعداد میں پراسرارہلاکتیں، تشویشناک انکشاف

کراچی کے ہسپتالوں میں بڑی تعداد میں پراسرارہلاکتیں، تشویشناک انکشاف


کراچی کے ہسپتالوں میں بڑی تعداد میں پراسرارہلاکتیں، تشویشناک انکشاف

کراچی  (ڈیلی پاکستان آن لائن)  شہر قائد میں ایسے لوگوں کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے جو یا تو مردہ حالت میں ہسپتال لائے جاتے ہیں یا پھر دوران علاج ایک سے 2 گھنٹے  میں ہی دم توڑ دیتے ہیں، بعض مریضوں کے سینے کے ایکسرے کرائے گئے تو ان کے پھیپھڑوں میں پانی کی نشاندہی ہوئی جس سے یہ خدشہ تقویت پارہا ہے کہ یہ لوگ یا کورونا سے مرے یا پھر کورونا کی وجہ سے ہونے والے نمونیا کا شکار ہوئے۔

انگریزی روزنامے دی نیوز کی رپورٹ کے مطابق لاک ڈاؤن کی وجہ سے حادثات میں کمی ہوئی ہے لیکن گزشتہ 2 ہفتوں سے جناح ہسپتال کی ایمرجنسی میں روزانہ کی بنیاد پر 15 سے 20 افراد کو یا تو مردہ حالت میں لایا جاتا ہے یا وہ ہسپتال پہنچ کر دوران علاج دم توڑ دیتے ہیں۔ ان میں سے 99 فیصد لوگ بیماریوں  کی وجہ سے مرے ہیں۔

جناح ہسپتال کی انتظامیہ کے مطابق 31 مارچ سے 13 اپریل کے دوران 109 افراد کو مردہ حالت میں ہسپتال کی ایمرجنسی میں لایا گیا جبکہ 90 افراد ایسے تھے جو علاج کے دوران ایک گھنٹے کے اندر جان کی بازی ہار گئے۔ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ وفات پانے والے یہ لوگ مختلف بیماریوں میں مبتلا تھے ، یا تو انہیں علاج کی سہولت میسر نہیں آرہی تھی یا انہیں لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہسپتالوں تک رسائی نہیں مل پارہی تھی۔

ایمرجنسی میڈیسن کے ایک ڈاکٹر نے بتایا کہ”ہم یہ نہیں کہہ رہے کہ یہ سب لوگ کرونا وائرس کی وجہ سے ہونے والے نمونیا سے مر رہے ہیں۔ ان میں کئی گردے فیل ہونے، جگر خراب ہونے اور دل کی بیماریوں سے بھی مر رہے ہوں گے لیکن ہمیں ان تمام افراد کی موت کی وجہ جاننے کی ضرورت ہے”۔

انڈس ہسپتال کے ایک سینئر ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ گزشتہ 2 ہفتوں سے سانس کی تکلیف اور پھیپھڑوں کی بیماری میں مبتلا مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔ سول ہسپتال کے ایک ڈاکٹر کاکہنا ہے کہ روزانہ 3 سے 4 لوگ کسی شدید بیماری کی وجہ سے جاں بحق ہوتے ہیں۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ پاکستان میں موت کے بعد وجوہات جاننے کا رواج نہیں ہے اور لواحقین پوسٹ مارٹم کی اجازت نہیں دیتے جس کی وجہ سے موت کی اصل وجہ پتا نہیں چل پاتی۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ گزشتہ 2 ہفتوں سے مرنے والے افراد کے بارے میں یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ وہ کورونا وائرس یا اس کی وجہ سے ہونے والے نمونیا سے مر رہے ہیں یا ان کی موت کی وجوہات کچھ اور ہیں۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے