کرونا وائرس کے وار، بھارت کے وہ تین ہسپتال جہاں نئے مریضوں کا داخلہ ہی بند کردیا گیا

کرونا وائرس کے وار، بھارت کے وہ تین ہسپتال جہاں نئے مریضوں کا داخلہ ہی بند کردیا گیا


کرونا وائرس کے وار، بھارت کے وہ تین ہسپتال جہاں نئے مریضوں کا داخلہ ہی بند …

نئی دہلی (ویب ڈیسک) بھارت کے اقتصادی دارالحکومت ممبئی میں تین نجی ہسپتالوں نے کروناوائرس پھیلنے کے خطرے کے پیش نظر اپنے دروازے نئے مریضوں پر بند کردیے ہیں۔

ممبئی کے جنوب میں واقع بھاٹیا ہسپتال کے عملہ کے قریباً 70 ارکان کو الگ تھلگ کر دیا گیا ہے۔ان کے کرونا وائرس کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں اور اب وہ ان کے نتائج کے منتظر ہیں۔بھارت کی ریاست مہاراشٹر میں نرسوں کی متحدہ تنظیم نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس اسپتال میں ایک مریض کو معدے میں تکلیف کے بعد داخل کیا گیا تھا۔اس کا کرونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے اور اس کے علاج پر مامور عملہ کوالگ تھلگ کردیا گیا ہے۔

نرسوں کی اس تنظیم نے مزید کہا ہے کہ 200 بستروں پر مشتمل بھاٹیا اسپتال نے کرونا وائرس کا شکارمریضوں سے براہ راست یا بالواسطہ رابطے میں آنے والے تمام عملہ کو بالخصوص شناخت کیا ہے۔فوری طور پر یہ واضح نہیں ہوا کہ اس اسپتال میں کل کتنے مریض زیر علاج تھے۔ممبئی اب تک بھارت میں کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ شہر ہے۔اس شہر میں کرونا وائرس کے 775 کیسوں کی تصدیق کی گئی ہے۔بھارت بھر میں کرونا وائرس کے 5865 کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ ان میں 169 ہلاک ہوچکے ہیں۔

ممبئی کے جنوب میں واقع دو اور اسپتالوں ووک ہارڈ اور جیسلوک کو بھی بھاٹیا اسپتال ایسی صورت حال کا سامنا ہے اور انھوں نے بھی نئے مریضوں کے داخلے پر پابندی عاید کردی ہے۔یہ دونوں اسپتال 700 بستروں پر مشتمل ہیں اور ان میں کام کرنے والی بعض نرسوں میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ووک ہارڈ اسپتال کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس کے عملہ کے متعدد ارکان غیرارادی طور پر اور بغیرعلم ایک مریض سے کرونا وائرس کا شکار ہوئے ہیں۔جیسلوک اسپتال کا کہنا ہے کہ کرونا کے ایک مریض کی وجہ سے اس نے اپنےعملہ میں قریباً ایک ہزار ارکان کے ٹیسٹ کیے ہیں اور ان سب کے نتائج منفی آئے ہیں لیکن اس کے باوجود بیرونی مریضوں کا اسپتال میں داخلہ بند ہے اور نہ روز نئے آنے والے مریضوں کا معائنہ کیا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی حکومت نے مہلک کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے ملک میں غیرملکیوں کے داخلے پر عارضی طور پر پابندی عاید کررکھی ہے۔بھارت کے بیورو آف امیگریشن نے 15 اپریل تک تمام غیرملکیوں کے سفری ویزے معطل کردیے ہیں۔تاہم بھارت میں پہلے سے موجود غیرملکیوں کے ویزے کارآمد رہیں گے۔بھارتی حکومت نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کئی شہروں میں لاک ڈاؤن نافذ کررکھا ہے۔

مزید : بین الاقوامی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے