کس نے کتنی سبسڈی لی اور پابندی کے باوجود پنجاب سے چینی ایکسپورٹ کرنے کیلئے سبسڈی کس نے منظور کروائی ؟ تہلکہ خیز انکشافات

کس نے کتنی سبسڈی لی اور پابندی کے باوجود پنجاب سے چینی ایکسپورٹ کرنے کیلئے سبسڈی کس نے منظور کروائی ؟ تہلکہ خیز انکشافات


کس نے کتنی سبسڈی لی اور پابندی کے باوجود پنجاب سے چینی ایکسپورٹ کرنے کیلئے …

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) وزیراعظم عمران خان نے وعدے کے مطابق چینی بحران کے ذمہ دارن کا تعین کرنے والی تحقیقاتی رپورٹ کو پبلک کر دیاہے ، رپورٹ پر حکومت گرنے اور سیاسی بحران کی دھمکیاں آئیں جبکہ تحقیقات کے دوران واجد ضیاءکو سنگین نتائج کی دھمکیاں دی گئیں اور وزیراعظم عمران خان پر رپورٹ پبلک نہ کرنے کا دباﺅ بھی تھا ۔

نجی ٹی وی اے آر وائے نیوز کے مطابق رپورٹ میں کہا گیاہے کہ پابندی کے باوجود پنجاب سے چینی ایکسپورٹ پر تین ارب روپے کی سبسڈی منظور کروائی گئی ، خسرو بختیار کے بھائی وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بخت نے سبسڈی منظور کروائی ،10 لاکھ ٹن ایکسپورٹ کی وجہ سے پاکستان میں چینی مہنگی ہوئی ، ایکسپورٹ سبسڈی سے چینی کی قیمت 55 روپے سے بڑھ کر 71 روپے فی کلو ہوئی ۔گزشتہ پانچ سال میں چینی کی برآمد پر 25 ارب روپے کی سبسڈی دی گئی ، نواز دور میں 22 ارب روپے کی سبسڈی دی گئی جبکہ موجودہ دور حکومت میں تین ارب کی سبسڈی دی گئی ۔

وزیراعظم عمرا ن خان کی جانب سے جاری کردہ تحقیقاتی رپورٹ نے چھ گروپس کی لوٹ مار کا بھانڈا پھوڑ دیاہے ،جنہوں نے چینی ایکسپورٹ پر سبسڈی لی ہے اور کے علاوہ مہنگی چینی سے بھی مال بنایا۔رپورٹ کے مطابق

جہانگیر ترین کی شوگر ملوں نے چینی ایکسپورٹ سے 56 کروڑ 10 لاکھ روپے کمائے ، جہانگیر ترین کی شوگر ملز نے مجموعی سبسڈی کا 22 فیصد ایکسپورٹ کیا ۔مریم نواز کے سمدھی چوہدری منیر ، مونس الہیٰ رحیم یار خان گروپ میں پارٹنر ہیں ، رحیم یار خان گروپ نے چینی ایکسپورٹ پر 45 کروڑ 20 لاکھ کی سبسڈی لی ، رحیم یار خان گروپ نے مجموعی سبسڈی کا 18 فیصد ایکسپورٹ کیا ،پانچ سال میں رحیم یار خان کے گروپ نے چینی کی سبسڈی سے چارارب روپے کمائے ۔

رپورٹ کے مطابق جے ڈبلیو شوگر ملز نے پیدوار کا 19 فیصد ایکسپورٹ کیا ، المعیزگروپ کے شمیم احمد نے چینی ایکسپورٹ پر 40 کروڑ 60 لاکھ سبسڈی لی ، ہنزہ شوگر ملز نے پیدوار کا 74 فیصد ایکسپورٹ کیا ، 40 کروڑ 98 لاکھ سبسڈی لی، حسین شوگر ملز نے 8 کروڑ 85 لاکھ ، شیخو شوگر ملز نے 5 کروڑ 68 لاکھ کی سبسڈی لی، پانچ سال میں جے ڈی ڈبلیو نے تین ارب ، ہنزہ نے دو ارب 80 کروڑ کی سبسڈی لی ،فاطمہ شوگر ملز نے پیدوار کا 68 فیصد ایکسپورٹ کیا ،24 کروڑ 83 لاکھ سبسڈی لی ،پانچ سال میں اومنی گروپ نے چینی ایکسپورٹ پر 90 کروڑ اسے زائد سبسڈی لی ۔رپورٹ میں کہا گیاہے کہ حکومت گنے کے بڑے زمینداروں اور شوگر ملوں کے گٹھ جوڑ کا توڑ کرے ۔

مزید : اہم خبریں /قومی



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے