کمپیوٹر کا زمانہ لیکن اگر طالب علم اپنے ہاتھ سے لکھ کر نوٹس بنائیں تو کیا فائدہ ہوتا ہے؟ سائنسدانوں نے انتہائی مفید مشورہ دے دیا

کمپیوٹر کا زمانہ لیکن اگر طالب علم اپنے ہاتھ سے لکھ کر نوٹس بنائیں تو کیا فائدہ ہوتا ہے؟ سائنسدانوں نے انتہائی مفید مشورہ دے دیا


کمپیوٹر کا زمانہ، لیکن اگر طالب علم اپنے ہاتھ سے لکھ کر نوٹس بنائیں تو کیا …

کیپشن:    سورس:    www.questoraclecommunity.org

  

اوسلو(مانیٹرنگ ڈیسک)آج کمپیوٹر کا دور ہے اور سکولوں میں کاغذ اور قلم کا چلن مفقود ہوتا جا رہا ہے کیونکہ بچے اب نوٹس بھی کمپیوٹر ہی پر بناتے ہیں۔تاہم اب سائنسدانوں نے نئی تحقیق میں بچوں کے لیے ’لکھنے‘ کا ایسا حیران کن فائدہ بتا دیا ہے کہ سن کر والدین اپنے بچوں کو کاغذ قلم تھمانے پر مجبور ہو جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق ناروے کے سائنسدانوں نے 12سال عمر کے 12طالب علموں پر کی گئی اس تحقیق کے نتائج میں بتایا ہے کہ سیکھنے کے لیے لکھنا بچوں کے لیے پڑھنے کی نسبت کئی گنا زیادہ فائدہ مند ہوتا ہے۔ اس تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ لکھنے سے بچوں کا دماغ مضبوط ہوتا ہے اور ان کی یادداشت تیز ہوتی ہے۔ 

رپورٹ کے مطابق نارویجن یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے سائنسدانوں نے ان طالب علموں کو دو گروپوں میں تقسیم کرکے ایک گروپ کو پڑھنے کے لیے مواد دیا جبکہ دوسروں کو پین اور کاغذ دے کر لکھنے پر لگا دیا۔ اس دوران سائنسدان ان کے دماغ میں ہونے والی سرگرمیوں کا آلات کے ذریعے معائنہ کرتے رہے۔ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ پروفیسر اوڈرے وین ڈر میر کا کہنا تھا کہ ”دونوں گروپوں کے دماغوں کی سرگرمیوں کے مشاہدے میں معلوم ہوا کہ جن بچوں کو لکھنے کا کام دیا گیا تھا ان کے دماغ کے سیکھنے سے منسلک حصے میں سرگرمی دوسرے گروپ کے بچوں کی نسبت بہت زیادہ دیکھی گئی۔بچوں کے لیے لکھنا مشکل ہوتا ہے اور اس طرح پڑھنے کی نسبت کم کام کرپاتے ہیں لیکن لکھنے سے ان کی دماغی صلاحیتوں میں بے پناہ اضافہ ہوتا ہے۔“

مزید :

تعلیم و صحت



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے