کوئی شرم ہوتی ہے کوئی حیاء ہوتی ہے، بھارتی سکھ مودی حکومت پر برس پڑا

مودی


کوئی شرم ہوتی ہے کوئی حیاء ہوتی ہے، غریب کا اچھا مذاق اڑانے کا طریقہ ہے، چند روپے کی خاطر لمبی لمبی لائن میں لگوائو اور خود اقتدار میں بیٹھ کر مزے لو ۔ بھارتی سکھ مودی سرکار پر برس پڑا ۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے بھارت میں بھی لاک ڈائون کی کیفیت چل رہی ہے، جس کی وجہ سے بھارتی حکومت کی جانب سے کورونا کی وجہ سے بے روزگار ہونےوالے افراد کی امداد کیلئے 500 روپے دیئے جارہے ہیں، جو ان کیساتھ کسی مذاق سے کم نہیں ہیں ۔ اسی حوالے سے بھارتی سکھ نے اپنا ویڈیو پیغام بنا کر اپ لوڈ کیا جس میں اس کا کہنا تھا کہ ایوانوں میں بیٹھ کر اقتدار کا مزہ لوٹنے والے سیاستدانوں کو شرم نہیں آتی جو 500 روپے کیلئے لائنیں لگوا کر غریبی کا مذاق اڑا رہے ہیں ۔

اس کا کہنا تھا کہ صبح صادق لوگ یہاں 500 روپے کے حصول کیلئے جمع ہوتے ہیں، جن کیلئے نہ تو کسی سائے کا انتظام ہے اور نہ ہی پانی پینے کا کوئی بندوبست ہے ۔ میں حاکم وقت نریندر مودی سے پوچھنا چاہتا ہوں جو اربوں روپیہ ایکٹرون سے اکھٹے ہوئے ہیں انہیں کہاں بھیجنا ہے ۔ ہمیں ہمارا حق دیا جائے ۔ بھارتی سکھ نے دہائی دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ایک طرف لاک ڈائون کی بات کرتے ہیں جبکہ دوسری جانب چند سو روپے کیلئے بھارتی عوام کی زندگی خطرے میں ڈال کر بنا کسی رولز ریگولشن کے لائنیں لگوائی جارہی ہیں ۔ تاہم بھارتی خواتین نے بھی دہائی دیتے ہوئے کہا ہے کہ مود ی سرکار کو چاہیے کہ بھارتی غریب عوام کا ڈیٹا بنا کر انہیں گھر گھر راشن دے تاکہ ہماری زندگیا ں محفوظ ہو سکیں ۔



install suchtv android app on google app store

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے