کورونا سے جاں بحق ہونے والے 13سالہ اسماعیل عبد الواہاب کے والدین اور بہن بھائی جنازے میں شریک نہ ہو سکے ،ایسی کہانی سامنے آگئی کہ آپ کا بھی دل بھر آئے

کورونا سے جاں بحق ہونے والے 13سالہ اسماعیل عبد الواہاب کے والدین اور بہن بھائی جنازے میں شریک نہ ہو سکے ،ایسی کہانی سامنے آگئی کہ آپ کا بھی دل بھر آئے


کورونا سے جاں بحق ہونے والے 13سالہ اسماعیل عبد الواہاب کے والدین اور بہن …

کورونا سے جاں بحق ہونے والے 13سالہ اسماعیل عبد الواہاب کے والدین اور بہن بھائی جنازے میں شریک نہ ہو سکے ،ایسی کہانی سامنے آگئی کہ آپ کا بھی دل بھر آئے

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن )کورونا وائرس سے برطانیہ میں جاں بحق ہونے والے پہلے بچے اسماعیل عبد الواہاب کو اہل خانہ کی غیر موجودگی میں دفنا دیا گیا ۔غیر ملکی خبر رساں ادارے دی گارڈین کے مطابق اسماعیل عبد الواہاب کی عمر 13برس تھی اور وہ کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد جاں بحق ہوا ،مرحوم کی ایک بڑی بہن ا ور چھوٹے بھائی پر بھی کورونا وائرس کی علامات ظاہر ہو رہی ہیں جس کی وجہ سے اسماعیل عبد الواہاب کے اہل خانہ کہ جنازے میں شرکت کی اجازت نہ دی گئی ۔تصویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ اسماعیل عبدالواہاب کو

تابوت میں رکھ کر چار افراد نے دفنایا جنہوں نے احتیاطی لباس پہنا ہوا تھا ۔جنازے میں شرکت کرنے والے افراد تابوت سے دور اور ایک دوسرے سے فاصلہ بنا کر کھڑے رہے ۔اسماعیل عبد الواہاب کا ٹیسٹ گزشتہ ہفتے مثبت آیا تھا جس کے بعد انہیں کنگز کالج ہسپتال میں داخل کرا دیا گیا تھا لیکن اس کے والدین اور بہن بھائی اسے ملنے ہسپتال میں انہیں آئے کیونکہ وہ از خود آئسو لیشن میں گھر میں ہی رہ رہے تھے ۔

مزید : بین الاقوامی /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے