کورونا وائرس، سٹیٹ بینک نے مداخلت کرتے ہوئے ڈالر کے پر کاٹ دیئے ، ایک دم کتنا سستا ہو گیا ؟ جانئے

کورونا وائرس، سٹیٹ بینک نے مداخلت کرتے ہوئے ڈالر کے پر کاٹ دیئے ، ایک دم کتنا سستا ہو گیا ؟ جانئے


کورونا وائرس، سٹیٹ بینک نے مداخلت کرتے ہوئے ڈالر کے پر کاٹ دیئے ، ایک دم کتنا …

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )کورونا وائرس اس وقت ملکی معیشت پر بھی اثر انداز ہو رہاہے جس کے باعث ڈالر پاکستان کی تاریخی بلندیوں کو چھونے کے بعد سٹیٹ بینک کی مداخلت سے واپس آنا شروع ہو گیاہے اور دوران ٹریڈنگ اڑھائی روپے سستا ہو گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس نے اب قیمتی جانوں کے بعد معیشتوں کو بھی نگلنا شروع کر دیاہے جس کے اثرات اب پاکستانی معیشت پر بھی ڈالرکی بڑھتی ہوئی قدر اور گرتی ہوئی سٹاک مارکیٹ میں واضح دیکھے جا سکتے ہیں ۔ آج صبح کاروبار کا آغاز ہوا تو انٹر بینک میں ڈالر کی قدر میں ایک روپیہ 87 پیسے اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر 168 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیاہے تاہم یہ پرواز مسلسل جاری نہیں رہ سکی اور سٹیٹ بینک نے مداخلت کرتے ہوئے روپے کی قدر کو سہا را دیا جس کے بعد ڈالر اڑھائی روپے کم ہو کر دوران ٹریڈنگ 165 روپے تک آ گیاہے ۔یاد رہے کہ ڈالر کی قیمت میں گزشتہ چار دن کے دوران 8 روپے 20 پیسے اضافہ دیکھنے میں آیا تھا ۔ گزشتہ روزکے مقابلے ڈالر ایک روپیہ 13 پیسے سستا ہواہے ۔دنیا بھر میں جب بھی کرنسی کی قدر گرتی ہے تو سٹیٹ بینک یا پھر حکومت مداخلت کرتی ہے اور سہارا فراہم کرتی ہے ۔

مزید : اہم خبریں /بزنس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے