کورونا وائرس: حجامت کے لیے ہوم سروس کے اشتہارات، حکومت بھی حرکت میں آگئی، بڑا قدم اٹھا لیا

حجامت


متحدہ عرب امارات میں کورونا وائرس کی وجہ سے باربر شاپس اور بیوٹی پارلرز بند ہیں تاہم صارفین کو ان کے ہوم سروس یعنی گھر پر خدمات کے اشتہارات وصول ہورہے ہیں جس کے بعد حکام حرکت میں آگئے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق کورونا وائرس کے انسداد کے لیے کی جانے والی احتیاطی تدابیر کے تحت ملک بھر میں باربر شاپس اور بیوٹی پارلرز کو بند کیا گیا ہے، تاہم صارفین کا کہنا ہے کہ انہیں مختلف باربر شاپس اور بیوٹی پارلر کی طرف سے ہوم سروس کے اشتہارات موصول ہورہے ہیں۔ صارفین کے مطابق انہیں ایس ایم ایس کے ذریعہ ہوم سروس کے اشتہارات موصول ہوئے ہیں۔

دبئی اور الفجیرہ میونسپلٹی کا کہنا ہے کہ باربر شاپس اور بیوٹی پارلر کی طرف سے ہوم سروس کے اشتہار کورونا وائرس کے انسداد کے لیے جاری کوششوں کے لیے سخت نقصان دہ ہیں۔

میونسپلٹی کا کہنا ہے کہ خلاف ورزی کرنے والے باربر شاپس یا بیوٹی پارلرز کے خلاف کارروائی ہوگی اور ان کے ساتھ کسی قسم کی رعایت نہیں برتی جائے گی۔

حکام کا کہنا ہے کہ ہوم سروس کے اشتہارات چلانا انتہائی غیر ذمہ داری ہے، ایسا کرنا جرم ہے۔ یہ دوسروں کو قانون توڑنے پر اکسانے کے زمرے میں آتا ہے جس پر 5 لاکھ درہم جرمانہ ہوسکتا ہے۔۔

میونسپلٹی نے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وبائی قوانین میں واضح ہے کہ جس نے بھی خود اپنی یا دوسری کی جان خطرے میں ڈالنے کی کوشش کی تو اسے قید اور جرمانہ ہوگا۔

دوسری جانب وزارت صحت کا کہنا ہے کہ باربر شاپس اور بیوٹی پارلر بند کرنے کا مقصد یہ ہے کہ یہاں کرونا وائرس پھیلنے کے زیادہ امکانات ہیں، جو کام دکانوں میں کرنے کی اجازت نہیں اسے گھروں میں کرنے کی اجازت کیسے ہوسکتی ہے۔

حکام کے مطابق حجام اور گاہک کے درمیان کام کے دوران فاصلہ بہت کم رہتا ہے جس کے باعث دونوں کو خطرہ لاحق ہے۔



install suchtv android app on google app store

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے