کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ملک امریکا میں لاک ڈاون ختم؟ ٹرمپ نے نئی منصوبہ بندی کااعلان کردیا

mobile logo


کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ملک امریکا میں لاک ڈاون ختم؟ ٹرمپ نے نئی …

واشنگٹن(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ نے ملک بھر پر لگے لاک ڈاون کے خاتمے کا فیصلہ سناتے ہوئے کورونا وائرس کے حوالے سے نئی منصوبہ بندی کااعلان کاکردیاہے۔ امریکی صدر کے نئے منصوبے کے مطابق امریکا کی تمام ریاستوں کو مرحلہ وار کھولا جائے گا۔ تین مرحلوں پر مشتمل اس منصوبہ بندی کا مقصد کورونا کے ساتھ جنگ کے ساتھ ساتھ تباہ ہوتی معیشت کو سنبھالا دینا ہے۔

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کورونا وائرس کی وبا کے باعث معیشت پر پڑنے والے دباؤ کی وجہ سے کافی پریشان ہیں۔ اسی لیے جمعرات کی بریفنگ میں بھی انھوں نے زور دیتے ہوئے کہا ’ہم اپنا ملک کھول رہے ہیں ۔۔۔ امریکہ کھلنا چاہتا ہے۔‘امریکی صدر کا کہنا تھا ’ہماری معیشت کو سرگرم ہونا چاہیے اور ہم یہ بہت جلد واپس حاصل کرنا چاہتے ہیں اور ایسا ہی ہوگا۔‘’ہم نے اپنی معیشت کو اس لیے بند کیا کیونکہ ہم یہ جنگ جیتنا چاہتے تھے۔ اور اب ہم اسے جیت رہے ہیں۔‘انھوں نے بتایا نے کہ تمام ریاستیں اپنے الگ الگ طریقہ کار پر کھلیں گی۔

گذشتہ چار ہفتوں کے دوران 2 کروڑ افراد کا کہنا تھا کہ وہ بے روز گار ہو گئے ہیں تاہم ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ شرح دوگنی ہو سکتی ہے۔

امریکی صدر کا کہنا تھا ’تمام ریاستیں مختلف ہے کچھ جلدی کھل جائیں گی اور کچھ کو تھوڑا مزید وقت چاہیے۔‘

انھوں نے ریاستوں کو ہمسایہ ریاستوں کے ساتھ مل کر کام کرنے کی ہدایت کی اور علاقائی امور میں ہم آہنگی پیدا کرنے کو کہا۔

ان کا کہنا تھا ’ہم گورنرز کے ساتھ کام کر رہے ہیں اور ٹیسٹوں کے لیے بھی کی رہنمائی کر رہے ہیں۔‘

بی بی سی کے مطابق در پردہ چین اور عالمی ادرہ صحت کو موردِ الزام ٹھہراتے ہوئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر کہا ہے کہ امریکی حکومت کو مناسب انداز سے کورونا وائرس کے متعلق خبردار نہیں کیا گیا تھا۔’میں ناراض تھا کیونکہ ہمیں اس بارے میں پہلے بتایا جانا چاہیے تھا۔‘’لوگوں کو ہمیں اس بارے میں بتانا چاہیے تھا۔ انہیں باقی تمام دنیا کو بتانا چاہیے تھا۔‘جب ان سے پوچھا گیا کہ وہ چین کے بارے میں کہہ رہے ہیں تو ان کا جواب تھا ’میں کچھ نہیں کہوں گا۔‘

وائٹ ہاؤس کی یاداشت کے مطابق انہیں پہلی بار جنوری میں خبردار کیا گیا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ نے چین کے سفر پر فوری پابندی کے بعد مارچ کے وسط تک بہت سا قیمتی وقت ضائع کیا۔

مزید :

اہم خبریںکورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے