"کورونا وائرس سے لڑنے کیلئے ترقی پذیر ممالک کو قرضوں

"کورونا وائرس سے لڑنے کیلئے ترقی پذیر ممالک کو قرضوں


"کورونا وائرس سے لڑنے کیلئے ترقی پذیر ممالک کو قرضوں میں ریلیف دیا جائے” وزیر …

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم عمران خان نے بین الاقوامی برادری، اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اور عالمی مالیاتی اداروں سے اپیل کی ہے کہ وہ کورونا کی وجہ سے ترقی پذیر ممالک کو درپیش مشکلات  میں کمی کیلئے قرضوں کے حوالے سے ایسا کوئی قدم اٹھائیں جس سے انہیں کورونا کے خلاف لڑنے میں سہولت مہیا ہو سکے۔

اپنے ویڈیو پیغام میں وزیر اعظم عمران خان نے کہاکہ ہم کورونا کے حوالے سے 2 طرح کا رد عمل دیکھ رہے ہیں، ایک رد عمل ترقی یافتہ جبکہ دوسرا رد عمل ترقی پذیر ممالک نے ظاہر کیا ہے۔ ترقی پزیر ممالک میں وائرس سے نمٹنے کے ساتھ  ساتھ معاشی مشکلات کے ساتھ نمٹنا بہت مشکل ہے، یہاںایک طرف لوگ کورونا سے مر رہے ہیں اور دوسری طرف بڑا چیلنج  لوگوں کو بھوک کی وجہ سے مرنے سے بچانا ہے۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ کورونا لاک ڈاؤن کے دوران امریکہ نے  2 اعشاریہ 2 ٹریلین ڈالر، جرمنی نے ایک ٹریلین یوروز اور جاپان نے ایک ٹریلین ڈالر کا ریلیف پیکج دیا ہے۔ دوسری جانب 22 کروڑ لوگوں کے ملک پاکستان میں ہم صرف 8 ارب ڈالر کا ریلیف پیکج دے سکے ہیں۔ پاکستان کی طرح ترقی پذیر ممالک کے پاس اتنا پیسہ نہیں ہے کہ  وہ  صحت کے نظام پر اتنا کچھ خرچ سکیں۔

وزیر اعظم نے بین الاقوامی برادری، اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اور عالمی مالیاتی اداروں سے اپیل کی کہ وہ ایسا کوئی قدم اٹھائیں جس سے ترقی پذیر ممالک کو قرضوں میں آسانی ملے اور وہ کورونا وائرس کے خلاف موثر طریقے سے لڑ سکیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے