کورونا وائرس نے قومی ہاکی کھلاڑیوں کو شدید مشکل میں ڈال دیا، فی کھلاڑی کتنے لاکھ روپے کا نقصان ہوا؟

کورونا وائرس نے قومی ہاکی کھلاڑیوں کو شدید مشکل میں ڈال دیا، فی کھلاڑی کتنے لاکھ روپے کا نقصان ہوا؟


کورونا وائرس نے قومی ہاکی کھلاڑیوں کو شدید مشکل میں ڈال دیا، فی کھلاڑی کتنے …

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) مالی مشکلات کے شکار قومی ہاکی پلیئرز کو کورونا وائرس کے باعث لاکھوں روپے نقصان کا اندیشہ ہے کیونکہ موذی وباءکی وجہ سے دنیا کی ٹاپ لیگز ملتوی ہوگئی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ ٹاپ پاکستانی کھلاڑیوں کی معاشی مشکلات میں اضافے کا خدشہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس نے دیگر شعبوں کی طرح کھیلوں پر بھی کاری ضرب لگائی ہے، مہلک وائرس کی وجہ سے نہ صرف کھیلوں کے عالمی میدان ویران ہوگئے بلکہ کھلاڑیوں کو بھی مالی نقصان کا سامنا ہے، دنیا کی ٹاپ ہاکی لیگز بھی ملتوی ہوگئی ہیں جن میں 20 سے 25 پاکستانی کھلاڑی حصہ لیتے ہیں اور اس طرح انہیں 25 سے 30 لاکھ روپے فی کس کا نقصان پہنچا ہے، لیگز سے ملنے والی رقم ٹاپ ہاکی کھلاڑیوں کی آمدنی کا سب سے بڑا ذریعہ ہے، ڈچ، جرمن، آسٹریلین، ملائیشین لیگز کے ساتھ ہانگ کانگ پریمیر لیگ بھی ملتوی ہوئی ہیں۔

کینیڈا کی وینکوور پریمیر لیگ، سپینش لیگ، انگلش لیگ اور بیلجیئم پریمیر لیگز کا انعقاد بھی موجودہ حالات میں کسی طور ممکن نہیں رہا، سب سے زیادہ پاکستانی کھلاڑی ملائیشین اورہانگ کانگ لیگزمیں حصہ لیتے ہیں، ڈچ لیگ، جرمن، سپینش اوربیلجیئم پریمیر لیگز میں 30 پاکستانی کھلاڑی شریک ہوتے رہے، انگلش، آسٹریلین اور رشین ہاکی لیگزمیں 20 پلیئرز ایکشن میں نظر آتے ہیں، مختلف لیگز سے معاہدوں کیلئے پی ایچ ایف نے این او سی جاری کئے ہوئے ہیں لیکن اب التواکی وجہ سے پلیئرز کو بھاری مالی نقصان کا سامنا ہے۔

مزید : کھیل /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے