کورونا وائرس کی آڑ میں موبائل فون کمپنیوں نے بھی ریلیف مانگ لیا لیکن کیا موقف اپنایا؟ تفصیلات سامنے آگئیں

کورونا وائرس کی آڑ میں موبائل فون کمپنیوں نے بھی ریلیف مانگ لیا لیکن کیا موقف اپنایا؟ تفصیلات سامنے آگئیں


کورونا وائرس کی آڑ میں موبائل فون کمپنیوں نے بھی ریلیف مانگ لیا لیکن کیا موقف …

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) ٹیلی کام کمپنیوں نے حکومت سے اربوں روپے کا ٹیکس ریلیف مانگ لیا ہے اور کہا ہے کہ کورونا وائرس کے باعث دیگر سیکٹرز کی طرز پر پیکیج دیا جائے ۔

روزنامہ جنگ کی رپورٹ کے مطابق ٹیلی کام کمپنیوں جاز، ٹیلی نار،زونگ اور یوفون کے سی ای اوز نے وفاقی سیکرٹری انفارمیشن ٹیکنالوجی شعیب احمد صدیقی کے نام لکھے گئے خط میں کہا ہے کہ کورونا وائرس کے دیگر سیکٹرز کی طرز پر ٹیلی کام کمپنیوں کو بھی پیکیج دیا جائے ، وفاقی اور صوبائی حکومتیں16 فیصد فیڈرل ایکسائز ڈیونیز ختم کریں ، ڈیٹا پر ٹیکس کی چھوٹ دی جائے، نادرا شناختی کارڈز کی تصدیق پر 23روپے چارجز ختم کئے جائیں، یو ایس ایف اور آر اینڈ ڈی ٹیکسز میں پچاس ارب روپے کی چھوٹ کا بھی مطالبہ کر دیا ہے، خط میں کہا گیا کہ آزاد کشمیر اورگلگت بلتستان میں تھری جی، فور جی سروسز دی جائیں، پی ٹی اے سالانہ ریگولیٹری ڈیوٹیز میں پچاس فیصد کمی کرے، خط میں کہا گیا کہ کورنا کی وباءتک ود ہولڈنگ ٹیکس عارضی طور پر ختم کر دیا جائے۔

اخباری ذرائع کے مطابق نادرا فی شناختی کارڈ بائیو میٹرک پر 23روپے لیتا ہے جو ماہانہ چودہ کروڑ روپے بنتے ہیں، تمام ٹیلی کام کمپنیوں کے سی ای اوز آج جمعہ کو وفاقی سیکرٹری آئی ٹی شعیب احمد صدیقی سے بھی اس حوالےسے ملاقات کرینگے ، جس میں ٹیکسز کے حوالے سے بات چیت ہو گی ، واضح رہے کہ وزیراعظم کی ہدایت پر موبائل آپریٹرز کے ٹیکسوں سمیت بعض دیگر مسائل کا حل پیش کرنے کیلئے وفاقی سیکرٹری آئی ٹی شعیب احمد صدیقی کی سربراہی میں 13رکنی کمیٹی تشکیل دی جا چکی ہے جو ان معاملات کا جائزہ لیکر رہی اور اپنی سفارشات وزیراعظم کو پیش کریگی۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے