کورونا وائرس کی وباءکتنے عرصے تک رہے گی؟ اس کے پھیلنے کی درست پیشنگوئی کرنے والے امریکی ماہر نے ایک اور پیشنگوئی کردی

کورونا وائرس کی وباءکتنے عرصے تک رہے گی؟ اس کے پھیلنے کی درست پیشنگوئی کرنے والے امریکی ماہر نے ایک اور پیشنگوئی کردی


کورونا وائرس کی وباءکتنے عرصے تک رہے گی؟ اس کے پھیلنے کی درست پیشنگوئی کرنے …

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) مائیکل اوسٹرہولم نامی امریکی ماہر نے کچھ عرصہ قبل کورونا وائرس کی پیش گوئی کی تھی جو بالکل درست ثابت ہوئی۔ اب انہوں نے یہ بھی بتا دیا ہے کہ یہ وباءکب تک دنیا میں باقی رہے گی۔ میل آن لائن کے مطابق مائیکل اوسٹرہولم نے جوئی روگن ایکسپریئنس پوڈکاسٹ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وباء6ماہ تک دنیا میں باقی رہے گی۔ آئندہ مہینوں میں اس میں شدت آنے والی ہے اور ہم لوگ اس سے زیادہ تکلیف اٹھانے والے ہیں۔ “

کورونا وائرس سے بچاﺅ کی احتیاطی تدابیر سے متعلق بات کرتے ہوئے مائیکل اوسٹرہولم نے کہا کہ ”دستانے اور ماسک پہن لینے سے ہم اس وائرس سے نہیں بچ سکتے۔ لوگ سمجھ رہے ہیں کہ وائرس ہمارے ہاتھوں کو لگتا ہے اور جب ہم ہاتھوں سے چہرے کو چھوتے ہیں تو یہ ہمارے جسم میں منتقل ہو جاتا ہے۔ میرے خیال میں اس طریقے سے بہت کم لوگ وائرس کا شکار ہوئے ہوں گے۔ میں سمجھتا ہوں کہ اصل وجہ وائرس سے آلودہ ہوا میں سانس لینا ہے۔ “

کچھ سازشی نظریات بھی دنیا میں گردش میں ہے جن میں کہا جا رہا ہے کہ کورونا وائرس دراصل ایک جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جا رہا ہے۔ مائیکل نے اس تاثر کی بھی نفی کی اور کہا کہ ”میرے خیال میں یہ سازشی نظریہ غلط ہے کہ کورونا وائرس جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال ہو رہا ہے۔ “ان کا کہنا تھا کہ ”کورونا وائرس کی ویکسین جلدی تیار ہونے کا کوئی امکان نہیں ہے چنانچہ ہمیں اس وباءکے خاتمے ہی کا انتظار کرنا ہو گا۔“

مزید : تعلیم و صحت



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے