"ہمارے پاس 200 کلو راشن جمع ہوگیا ہے، یہ لے کر شیمپو اور

"ہمارے پاس 200 کلو راشن جمع ہوگیا ہے، یہ لے کر شیمپو اور


"ہمارے پاس 200 کلو راشن جمع ہوگیا ہے، یہ لے کر شیمپو اور دیگر لگژری چیزیں دے یں” …

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) کورونا کی وجہ سے ہونے والے لاک ڈاؤن کے دوران پاکستان کے مخیر حضرات نے دل کھول کر غریبوں کی امداد کرنے کی کوشش کی ہے لیکن بعض جگہوں پر ایسا بھی دیکھنے  میں آرہا ہے کہ لوگ راشن فروخت کرتے پائے گئے ہیں، ایسی ہی ایک ویڈیو کراچی سے بھی سامنے آئی ہے۔

دکاندار کی جانب سے بنائی گئی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک آدمی اور خاتون موٹرسائیکل پر آکر راشن فروخت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ راشن فروش نے دکاندار سے کہا کہ ان کے پاس بہت زیادہ راشن جمع ہوگیا ہے اس لیے انہیں شیمپو، صابن سمیت دیگر استعمال کی چیزیں فراہم کی جائیں ۔

راشن فروش نے دکاندار کو بتایا کہ ان کے پاس 3 سے 4 من یعنی 200 کلو کے قریب راشن جمع ہوگیا ہے ، وہ یہ راشن بھی فروخت کرنا چاہتے ہیں۔

دکاندار نے راشن فروشوں کو باتوں میں الجھانے کے بعد یہ کہہ کر ٹرخا دیا کہ ان کے بڑے بھائی ایک گھنٹے کے بعد آئیں گے جس کے بعد وہ فیصلہ کریں گے کہ راشن خریدنا ہے یا نہیں۔

سوشل میڈیا پر یہ ویڈیو سامنے آنے کے بعد پاکستانیوں کی جانب سے سخت غم و غصے کا اظہار کیا جارہا ہے، لوگ یہ کہہ رہے ہیں کہ اس طرح کے پیشہ ور لوگوں کی وجہ سے اصل حقدار محروم رہ جاتے ہیں اور اس طرح کی حرکتیں دیکھ کر مخیر حضرات کو بھی دھچکا لگتا ہے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی /کورونا وائرس



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے