11 ایسے گھریلو ٹوٹکے جو آپ کو عام بیماریوں میں فوری آرام دیں۔۔۔ اگر آپ کو زکام ہے تو یہ ضرور پڑھیں

11 ایسے گھریلو ٹوٹکے جو آپ کو عام بیماریوں میں فوری آرام دیں۔۔۔ اگر آپ کو زکام ہے تو یہ ضرور پڑھیں


11 ایسے گھریلو ٹوٹکے جو آپ کو عام بیماریوں میں فوری آرام دیں۔۔۔ اگر آپ کو زکام …

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) کئی بیماریوں کا علاج ہمارے گھر میں ہی موجود ہوتا ہے لیکن لوگ آگہی نہ ہونے کی وجہ سے ڈاکٹر کے پاس جانے پر مجبور ہوتے ہیں۔ ٹائمز آف انڈیا نے ماہرین کے حوالے اپنی رپورٹ میں 11مختلف عارضوں سے نجات کے آسان گھریلو ٹوٹکے بتائے ہیں جو ہر کسی کو معلوم ہونے چاہئیں۔یہ ٹوٹکے ذیل میں بیان کیے جا رہے ہیں:

خواتین کو ماہواری کے دوران تکلیف ہونا

ٹھنڈے پانی میں دو یا تین لیموﺅں کا رس ڈالیں اور پی لیں۔ روزانہ یہ عمل کرنے سے حیض کے دنوں میں ہونے والی تکلیف سے نجات مل جائے گی۔

دائمی سردرد

ایک سیب کو چھیل کر باریک ٹکڑے کر لیں۔ ان میں تھوڑا سا نمک اچھی طرح مکس کریں اور یہ آمیزہ صبح نہار منہ کھائیں۔

قبض ، گیس کے باعث پیٹ کا اپھارہ

ایک چوتھائی چمچ بیکنگ سوڈا پانی میں ڈال کر پئیں

گلے میں درد ہونا

تُلسی کے دو تین پتے پانی میں ہلکی آنچ پر ابالیں، حتیٰ کہ پتوں کا عرق پانی میں آ جائے۔ پھر اس سے غرارے کریں۔

منہ کا السر(منہ میں زخم ہو جانا)

کیلے اور شہد کو ملا کر ایک پیسٹ بنائیں اور اسے منہ کے اندر متاثرہ حصوں پر لگادیں۔

ناک بند ہونا

آدھاکپ پانی لیں اور اسے گرم کر لیں۔ اس میں سیب کا سرکہ اور چٹکی بھر پسی ہوئی لال مرچ ڈالیں اور مکس کر کے پی لیں۔ دن میں دو بار یہ عمل دہرائیں۔

بلند فشارخون(ہائی بلڈپریشر)

دودھ کے ساتھ آملہ کھانے سے بلڈپریشر کم ہوتا ہے۔ اسے صبح کے وقت استعمال کرنا زیادہ بہتر ہوتا ہے۔

دمہ

ایک چمچ شہد میں آدھ چمچ دار چینی ملائیں اور رات کو سونے سے قبل استعمال کریں۔ باقاعدگی سے روزانہ یہ آمیزہ لیں۔

سر میں خشکی اور سکری آنا

ناریل کے تیل میں کافور ملائیں اور سونے سے قبل سر میں لگا لیں۔ روزانہ یہ عمل دہرائیں۔

کم عمری میں بالوں کا سفید ہوجانا

خشک آملہ کو ٹکڑوں میں کاٹ کر ناریل کے تیل میں تب تک ابالیں کہ آملہ کے ٹکڑوں کی شکل جھلسی ہوئی گرد جیسی ہو جائے۔ اس کے بعدروزانہ اس تیل کی سر میں مالش کریں۔

آنکھوں کے گرد سیاہ حلقے پڑنا

گلیسرین میں مالٹے کا رس ملا کر آنکھوں کے گرد متاثرہ جلد پر لگائیں۔

مزید :

تعلیم و صحت



جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے